ہند بحرالکاہل میں مشغولیت کو بڑھانے کے لیے ہند۔فرانسیسی روڈ میپ

 میونخ۔21فروری۔ ہندوستان اور فرانس نے اتوار کو وزیر خارجہ ایس جے شنکر کے پیرس کے دورے کے پہلے دن اپنے فرانسیسی ہم منصب جین یوس لی کے ساتھ بات چیت کے بعد ‘بلیو اکانومی اور اوشین گورننس’ پر مشترکہ روڈ میپ اپناتے ہوئے سمندری ڈومین میں تعلقات کو مضبوط کرنے کا عزم کیا۔ ڈرین2022 کی پہلی ششماہی میں یورپی یونین کی فرانسیسی صدارت سے بھی توقع ہے کہ ہند-بحرالکاہل کے خطے میں سلامتی، کنیکٹیویٹی اور اقتصادی ترقی سمیت ہندوستان کے ساتھ یورپی یونین کی شمولیت کو مزید شکل دے گی۔ہند-بحرالکاہل میں نوآبادیاتی دور سے برقرار رہنے والے علاقوں کے ساتھ، فرانس ایک بڑا کھلاڑی ہے اور علاقائی سمندری طاقتوں کے ساتھ ساتھ یورپی یونین کے ذریعے دو طرفہ طور پر اپنی سرگرمیاں بڑھانے کی کوشش کر رہا ہے۔بلیو اکانومی اور اوشین گورننس پر روڈ میپ  این ایس اے اجیت ڈوول اور فرانسیسی صدر کے سفارتی مشیر ایمانوئل بون کے درمیان بحری، خلائی اور سائبر ڈومینز اور دفاعی صنعت کاری میں نئے اقدامات کو آگے بڑھانے کے لیے سیکورٹی کے حوالے سے بات چیت کے کئی دور کی تکمیل کرتا ہے۔  وزارت خارجہ امور کی ایک نیوز ریلیز میں کہا گیا ہے کہ روڈ میپ کا مقصد ادارہ جاتی، اقتصادی، بنیادی ڈھانچہ اور سائنسی تعاون کے ذریعے بلیو اکانومی کے میدان میں شراکت داری کو بڑھانا ہے۔جے شنکر اور لی ڈریان نے اہم علاقائی اور عالمی مسائل پر بھی تبادلہ خیال کیا، خاص طور پر ہندوستان-یورپی یونین تعلقات اور 1 جنوری 2022 سے شروع ہونے والی یورپی یونین کونسل کی فرانسیسی صدارت کی ترجیحات پر بھی بات چیت کی۔ دونوں وزراء نے افغانستان کی صورتحال، JCPOA  اور یوکرین میں بدلتی ہوئی صورتحالپر بھی تبادلہ خیال کیا۔ جے شنکر کے دورے کے دوران اہم تقریب بدھ کو ہند-بحرالکاہل میں تعاون پر یورپی یونین کا وزارتی فورم ہے جہاں وہ ہند-بحرالکاہل اور یورپی یونین کے ممالک کے کئی دیگر وزراء کے ساتھ شرکت کریں گے۔