بورڈنگ اسکولوں کوبھی آئی سولیشن وارڈوں میں کیاجارہاہے تبدیل


بھوپال/ہوشنگ آباد:یکم اپریل(نیانظریہ بیورو)
مدھیہ پردیش کے ہوشنگ آباد ضلع میں حکومت نے ضلع انتظامیہ سے محکمہ تعلیم کے تحت رہائشی اسکولوں اور ہاسٹلوں کو آئی سولیشن مراکز کے طور پر استعمال کرنے کے لئے کہا ہے ، اور اسی کے تحت ہوشنگ آباد انتظامیہ نے گیانودیہ اسکول کواس کے لئے تیارکیاہے ، تاکہ ضرورت پڑنے پر ان رہائشی اسکولوں کو اور ضلع انتظامیہ بغیر کسی اضافی قیمت کے ہاسٹلز کو آئی سولیشن مراکز میں تبدیل کر سکتی ہے۔
غورطلب ہے کہ تعلیمی اداروں میں تعطیلات کے باعث رہائشی اسکولوں اور ہاسٹلز میں طلباءاس وقت قیام نہیں کررہے ہیں اور اسی وجہ سے انہیں آئی سولیشن مراکز کے طور پر استعمال کیا جاسکتا ہے۔ گیانودیہ اسکول میں 200 سے زائد کمرے تھے ، 500 بستر اور رہائشی اسکولوں اور ہاسٹلوں میں کافی جگہ اور تمام ضروری سہولیات موجود ہیں۔
انہوں نے مزید کہا کہ اس طرح کے اسکول اورہاسٹلز عام طورپر آبادی والے علاقوں سے دور ہیں۔ لہذا ا ن اسکولوں اورہاسٹلز کواس بیماری کے لئے آئی سولیشن وارڈ کے طورپر آسانی سے استعمال کئے جاسکیں گے۔ اسی ایمرجنسی میں مریضوں کو تنہائی کے طور پر رکھا جاسکتا ہے اور اسی کے ساتھ ہی انتظامیہ بھی لوگوں کو باہر سے رہنے کا بندوبست کرے گی۔ جس کا ضلع انتظامیہ نے جائزہ بھی لیا ہے۔