ہندوستان کے لیے خطرناک ہے مئی، ایک ہفتے میں ہی 23 ہزار نئے کیس اور 811 اموات

ہندوستان: خطرناک ہے مئی، ایک ہفتے میں ہی 23 ہزار نئے کیس اور 811 اموات
ہندوستان میں کورونا انفیکشن خطرناک رخ اختیار کرتا جا رہا ہے۔ ملک میں کورونا مریضوں کی تعداد 56 ہزار کو پار کر گئی ہے۔ 30 اپریل تک کل مصدقہ کیسز 33 ہزار کے قریب تھے جو مئی کے شروعاتی 7 دنوں میں بڑھ کر 56 ہزار تک پہنچ گئے ہیں۔ یعنی گزشتہ 7 دنوں میں 23 ہزار نئے کیس سامنے آئے ہیں۔ اسی طرح 30 اپریل تک 1075 لوگوں کی موت اس انفیکشن کی وجہ سے ہندوستان میں ہوئی تھی جو اب بڑھ کر 1886 ہو گئی ہے۔ اس طرح دیکھا جائے تو گزشتہ 7 دنوں میں 811 لوگوں کی موت واقع ہو چکی ہے۔ راحت کی بات یہ ہے کہ لوگ تیزی سے ٹھیک بھی ہو رہے ہیں۔ 30 اپریل تک تقریباً 8 ہزار لوگ ٹھیک ہوئے تھے اور اب یہ تعداد 16 ہزار کو پار کر چکی ہے۔ یعنی ٹھیک ہونے والوں کی تعداد دوگنی بڑھی ہے۔

اتر پردیش: نوئیڈا انتظامیہ سے اجازت ملنے کے بعد سیمسنگ فیکٹری میں کام شروع
لاک ڈاؤن کی وجہ سے ہندوستان میں سبھی کاروبار ٹھپ پڑے ہوئے ہیں۔ لیکن لاک ڈاؤن 3.0 میں کئی جگہ نرمی دی گئی ہے تاکہ کاروباری سرگرمیاں شروع ہو سکیں۔ اس کے تحت آج سیمسنگ فیکٹری میں دوبارہ کام شروع ہو گیا ہے۔ نوئیڈا انتظامیہ سے اجازت ملنے کے بعد سیمسنگ فیکٹری میں ایک بار پھر کام شروع کرنے کا فیصلہ لیا گیا۔

ہندوستان: گزشتہ 24 گھنٹوں میں ہوئیں 103 اموات، مہلوکین کی مجموعی تعداد 1886
مرکزی وزارت کے ذریعہ جاری کردہ تازہ اعداد و شمار کے مطابق ہندوستان میں کورونا وائرس انفیکشن سے ہلاک ہونے والوں کی مجموعی تعداد 1886 پہنچ گئی ہے۔ گزشتہ 24 گھنٹے میں مزید 103 افراد اس انفیکشن کی وجہ سے ہلاک ہوئے۔ علاوہ ازیں کووڈ-19 کے 3390 نئے معاملے سامنے آئے ہیں جس کے بعد مجموعی طور پر ہندوستان میں متاثرین کی تعداد 56342 تک پہنچ گئی ہے۔

مہاراشٹر ممبئی واقع آرتھر روڈ جیل میں 77 قیدی اور 26 ملازمین کورونا پازیٹو
کورونا سے بری طرح متاثر ممبئی کے لیے لگاتار فکرانگیز خبریں سامنے آ رہی ہیں۔ اب پتہ چلا ہے کہ آرتھر روڈ جیل میں ایک ساتھ 77 قیدی پازیٹو پائے گئے ہیں۔ علاوہ ازیں 26 جیل ملازمین بھی کورونا کی زد میں ہیں۔ یہ پتہ چلنے کے بعد جیل انتظامیہ میں ایک ہنگامہ سا برپا ہو گیا ہے اور سبھی کو علاج کے لیے اسپتال میں داخل کرایا گیا ہے۔ یہ جانکاری خود مہاراشٹر کے وزیر داخلہ انل دیشمکھ نے دی ہے۔