مرکزی حکومت کے ذریعہ مزدروں کے مفادمیں لئے گئے فیصلے قابل تعریف:کمل ناتھ


بھوپال:3مئی(نیانظریہ بیورو)
عالمی مرض کورونا کو لے کر جاری سیاسی ہلچل کے درمیان سابق وزیراعلیٰ اور کانگریس ریاستی صدر کمل ناتھ نے مزدوروں اور اسٹوڈینٹس کو لانے کے لئے چلائی جارہی خصوصی ٹرین کے فیصلے کا خیر مقدم کیا ہے۔ وہیں انہوں نے ناسک سے بھوپال پہنچی خصوصی ٹرین میں کرایہ وصولے جانے پر ناراضگی ظاہر کی ہے اور فوری طور پر معاملے کو سنگینی سے لینے کا مطالبہ کیا ہے۔ کمل ناتھ نے ٹویٹ کر لکھا کہ کانگریس پارٹی گذشتہ ایک مہینے سے مطالبہ کررہی تھی کہ ملک بھر کے مختلف ریاستوں میں جو غیرریاستی مزدور بھائی، طلبا پھنسے ہوئے ہیں انہیں واپس اپنے اپنے گھر لانے کے لئے خصوصی ٹرینیں چلائی جائے۔ مرکزی حکومت نے ایک مہینے بعد فیصلہ لیا کہ خصوصی ٹرینیں چلائی جائے گی، ہم اس فیصلے کا خیر مقدم کرتے ہیں۔ناتھ نے اگلے ٹویٹ میں لکھا کہ اس کے لئے یہ طے ہوا کہ مزدور سے کرائے کی رقم نہیں لی جائے گی۔ اس کو ریاستی حکومتیں اٹھائیں گی، لیکن جس طرح سے تصویریں سامنے آرہی ہیں کہ ناسک سے بھوپال آئی خصوصی ٹرین میں مسافرین سے کرایہ وصولا گیا۔وہ بے حد افسوس کی بات ہے۔ کورونا مہاماری کے لاک ڈاﺅن کی وجہ سے مزدور کا پہلے ہی روزگار چھن چکا ہے، اس کے پاس کھانے کو پیسے نہیں تک نہیں ہے،ایسے پریشانی کے دور میں اس سے گھر واپسی کا کرایہ وصولہ جانا بیحد شرمناک ہے۔ حکومت اس معاملے کو سنجیدگی سے لے کر فوری طور پر کرایہ وصولی پر روک لگائے، ریاست کے واپس گھر آرہے مزدور بھائیوں کے کرائے کی رقم کا خرچ حکومت خود برداشت کرے۔