گیتا نگر میں راشن لینے کے لئے لوگوں کاامڑا ہجوم


اندور میں کورونا وائرس کے 165 نئے مریض آئے سامنے
اندور 28 اپریل(نیا نظریہ بیورو) اندورشہر میں کورونا وائرس کے وبا پھیلتے ہی جارہا ہے ۔ پیر کی شب آئی رپورٹ میں 165 مریضوں میں کورونا وائرس کی تصدیق ہو ئی ہے ، جس سے شہر میں کورونا متاثرین کی تعداد 1372 ہوگئی ہے۔ کہا جاتا ہے کہ اس وائرس سے بچنے کا واحد راستہ سماجی دوری ہے ، جس کے لئے شہر میں لاک ڈا¶ن اور کرفیو نافذ کیاگیا ہے ، لوگوں سے گھروں میں ہی رہنے کی اپیل کی جارہی ہے ، اس کے باوجود لوگ قواعد پر عمل نہیں کررہے ہیں اور انفیکشن کو دعوت دیتے ہیں۔ منگل کو صبح چندن نگر پولیس اسٹیشن کے علاقے گیتا نگر میں راشن کی دکان پر راشن لینے کے لئے لوگوں کا ہجوم امڑ پرا۔ اس دوران لوگ ایک دوسر ے کے درمیان ضروری فاصلہ کے بارے میں بھول گئے اور ایک دوسرے سے قریب ہو کر کھڑے رہے۔ مانوتا اسکول میں واقع اس راشن شاپ پر لوگوں کا ہجوم جمع ہوا تو پولیس بھی وہاں موجود تھی ، لیکن انہوں نے لوگوں کو دور کھڑا کرنے کی زحمت گوارا نہیں کی۔ اس کے علاوہ ، شہر کے بہت سارے علاقوںمیں ، بلا وجہ گھر وں سے باہر سڑکوں پر گھومنے والوں کو پولیس نے روک کر سزا دی ۔
میونسپل کارپوریشن نے اب گھر گھر سبزیوں کو پہنچانے کی تیاری کرلی ہے۔ اس کے لئے سبزی فروشوں اور ان کے سب ڈیلروں کو مقرر کیا گیا ہے۔ یہ پیکٹ 150 روپے کا ہوگا۔ اس میں لوکی ، ترئی ، گلکی کے ساتھ ضروری سبزیاں اور دھنیا مرچ ہوگی۔ اس سسٹم کے نفاذ میں دو سے تین دن لگ سکتے ہیں۔
عوامی مقامات پر تھوکنے پر ہزار روپے عائد ہو گا جرمانہ
کورونا انفیکشن ، تھوکنے ، کھانسنے یا چھینکنے سے پھیلتا ہے ، لہٰذا حکومت نے عوامی مقام پر تھوکنے پر ایک ہزار روپے جرمانہ مقرر کیا ہے۔ سبھی کیلئے ماسک بھی لگانا لازمی ہے۔