نجی اسکول ایک سال تک نہیں بڑھاسکیں گے فیس:محکمہ تعلیم


بھوپال:25اپریل(نیانظریہ بیورو)
محکمہ اسکول ایجوکیشن نے کورونا وائرس کے باعث ایک آرڈر جاری کیا ہے۔ محکمہ تعلیم نے حکم میں کہا ہے کہ لاک ڈاو¿ن میں نہ اساتذہ کی تنخواہ میں کمی کی جائے گی اور نہ ہی اگلے سال فیسوں میں اضافہ کیا جائے گا۔ یہ حکم سرکاری اور نجی دونوں اسکولوں میں نافذ ہوگا۔
کورونا وائرس کی وجہ سے ملک میں مکمل لاک ڈاو¿ن ہے۔ تعلیمی اداروں کی بندش کی وجہ سے نجی اسکولوں میں آن لائن تعلیم دی جارہی ہے۔ اسی کے ساتھ ، سرکاری اسکول آن لائن کلاس بھی لگا رہے ہیں۔ نجی اسکولوں سے شکایات موصول ہوئی تھیں کہ ، آن لائن مطالعے کی وجہ سے ، نجی اسکولوں کے ذریعہ طلباءسے فیسوں کا مطالبہ کیا جارہا ہے۔ نیز ، بہت سے نجی اسکولوں میں ، اساتذہ کو تنخواہیں بھی نہیں دی گئیں ہیں۔
جس کے تحت محکمہ ایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ نے سرکاری اور نجی اسکولوں کی فیسوں میں اضافے نہ کرنے کا حکم جاری کردیا ہے۔
بتایاجاتاہے کہ اس صورتحال میں ضلع ایجوکیشن آفیسر کے دفتر سے حکم جاری کیا گیا ہے کہ لاک ڈاو¿ن کی وجہ سے کسی بھی اساتذہ کی تنخواہ میں کٹوتی نہیں کی جائے گی اور نہ ہی اگلے سال فیسوں میں اضافہ کیا جائے گا۔ آرڈر کے مطابق ، سیشن 2020-21 کے اگلے آرڈر تک نجی اسکولوں کے ذریعہ کسی بھی فیس میں اضافہ نہیں کیا جائے گا۔ اس کے علاوہ ، والدین کو فیسوں کی ایک ایک مد میں ادائیگی کرنے پر مجبور نہیں کیا جائے گا۔ پرائیویٹ اسکول سہولت کے مطابق ماہانہ اور 4 قسطوں میں فیس وصول کرسکتے ہیں۔ فیس جمع نہ کروانے کی وجہ سے کسی بھی طالب علم کا نام اسکولوں سے نہیں کاٹا جائے گا۔