جے پی اسپتال کے ڈاکٹر پر ڈیوٹی روسٹر میں منمانی کرنے کا ملازمین نے لگایا الزام


بھوپال:20اپریل(نیانظریہ بیورو)
راجدھانی بھوپال واقع جے پی ا ہسپتال میں کورونا وائرس کے مشتبہ مریضوں کو تنہائی میں رکھا گیا ہے ، یہاں ڈاکٹر کی ڈیوٹی لگاتار جاری ہے۔اسپتال کے تمامشعبوں کے ڈاکٹروں کو ڈیوٹی پر لگا دیا گیا ہے۔ ڈاکٹر مستقل طور پر کام پر ہیں ، اس صورتحال میں اب کچھ ڈاکٹروں نے مسلسل ڈیوٹی کی وجہ سے جے پی اسپتال کے احاطے میں پوسٹر لاٹ کر کسی دوسرے ڈاکٹر کے خلاف پوسٹر میں منمانی کا الزام لگایا ہے۔
پوسٹر پر لکھا ہوا ہے کہ اسپتال کے احاطے میں پوسٹ کردہ پوسٹر میں ذکر کیا گیا ہے کہ ڈاکٹر اگروال روسٹر بنانے میں تعصب رکھتے ہےں۔وہیں ڈاکٹر اگروال اپنے شعبےکے علاوہ دیگرڈاکٹروں کوڈیوٹی نہیں دیتے۔
اسپتال میں مرد ڈاکٹروں کے مقابلے میںخواتین ڈاکٹروں کی تعداد زیادہ ہے لیکن خواتین ڈاکٹروں کے لئے کوئی نائٹ ڈیوٹی نہیں لگائی جارہی ہے ، جبکہ پرنسپل سیکریٹری صحت نے کلاس 1 کو بھی ڈیوٹی دینے کا حکم دیا تھا۔اس پورے معاملے میں پرنسپل سکریٹری ، سی ایم ایچ او اور کلکٹر سے توجہ دینے کی بات کہی گئی ہے۔تاہم اس بارے میں ابھی تک کوئی اطلاع سامنے نہیں آسکی ہے کہ اسپتال کے ڈاکٹروں نے یہ پوسٹر چسپاں کیا ہے یانہیں۔ اسی کے ساتھ ابھی تک اسپتال انتظامیہ کی طرف سے بھی ابھی تک اس معاملے میںکچھ نہیں کہا گیا ہے۔