لاک ڈاﺅن کی خلاف ورزی کرنے والوں کے خلاف پو لیس نے کی کارروائی


30 افراد کوپکڑ کرمادھو کالج کے عارضی جیل میں کیا بند
اُجین18 اپریل(نیا نظریہ بیورو)
کورونا انفیکشن کی وجہ سے شہر میں لاک ڈاو¿ن اور کرفیو کے نفاذ کے باوجود بہت سارے لوگ بلا وجہ گاڑیوں سے یا پیدل سڑکوں پر گھومتے نظر آتے ہیں ۔ خاص بات یہ ہے کہ ان میں زیادہ تر افراد شامل ہیں جنہیں پولیس نے لاک ڈاو¿ن کی خلاف ورزی کرنے پر ماضی میں بھی پکڑا تھا اور گھروں میں ہی رہنے کے بابت انہیںسمجھایا تھا ، لیکن یہ لوگ صبح و شام گھروں سے بار بار نکل کرسڑ کوں پر آوارہ گردی کرتے رہتے ہیں۔دو دن تک ، پولیس نے اشیائے خورد ونوش کی خرید اری کیلئے سختی کم کردی تھی ۔اس دورا ن لو گوں نے گھروں کیلئے ضروری سامان خریدے ۔ اس کے نتیجے میں ، سڑکوں پر گاڑیوں کی نقل و حرکت معمول کے دنوں کی طرح شروع ہوگئی۔ مزید سختی کے لئے ، پولیس نے آج صبح سے مختلف علاقوں میں دوبارہ چیکنگ مہم شروع کی اور 30سے زائد افراد کو لاک ڈاو¿ن کی خلاف ورزی پر مادھو کالج کی عارضی جیل بھیج دیا ، جبکہ کچھ لوگ جو ضروری کاموں کے لئے سڑکوں پر نکلے تھے انہیں پولیس نے معقول وجہ بتانے کے بعد جانے دیا ۔
کوتوالی اے ایس آئی جناب چندربھان نے بتایا کہ وزیر اعظم نے قوم سے اپنے خطاب میں وطن عزیز سے 7 باتیں کہی تھی ان میں اپنے اپنے موبائل میں سیتوایپ کو ڈاو¿ن لوڈ کرنا تھا۔ اگر کورونا اس شخص کے آس پاس متاثر ہوا ہے جس کا موبائل اس ایپ میں ڈاو¿ن لوڈ کیا جائے گا تو ، اس کی معلومات فورا ً دستیاب ہوجائے گی۔ وزیر اعظم کی کال کے باوجود ، بہت سارے لوگوں نے اپنے موبائل پر یہ ایپ ڈاو¿ن لوڈ نہیں کیا ہے۔
صبح کے وقت ، کوئلہ پھاٹک چوراہے پر غیر ضروری طور پر سڑکوں پر گھومنے والے افراد کو چیک کیا گیا اور ان کے موبائل چیک کیے گئے ، موبائلوں سے موقع پر ہی ایپ ڈاو¿ن لوڈ کرائی گئی جس میں اروگیا سیتو ایپ ڈاو¿ن لوڈ نہیں تھا۔ تین بتی چوراہا ، فری گنج برج ، چامنڈاماتا چوراہا ، دیواس گیٹ ، دولت گنج ، پٹیل نگر وغیر ہ علاقوں میں صبح 8 بجے سے سڑکوں پر چلنے والے لوگوں کی سخت جانچ پڑتال شروع کردی گئی۔وہ لوگ جو گھر سے باہر نکلنے کی مناسب وجوہات دے رہے تھے ، انھیں آگے جانے کی اجازت دی گئی لیکن جو بہانے بنا رہے تھے انہیں پکڑا گیا اور مادھوکالج میں عارضی جیل بھیج دیا گیا۔ صبح 10.30 بجے تک ، 30 افراد کو لاک ڈاو¿ن کی خلاف ورزی کرنے پر مادھو کالج کی عارضی جیل میں بند کر سزا دی گئی ۔فری گنج پل ، چامنڈا ماتا کی طرف ، پولیس اہلکاروں نے غیر ضروری طور پر سڑکوں پر گھومنے والے لوگوں کو روک لیا اور مناسب وجوہات نہ بتانے پر کارروائی کی۔لاک ڈاو¿ن کی خلاف ورزی کرنے والوں کو پولیس کی گاڑی کے ذریعہ مادھو کالج جیل بھیج دیا گیا۔ اسی وقت ، کچھ لوگوں نے اپنے موبائلوں میں آروگیا سیتو ایپ ڈاو¿ن لوڈ بھی کیا۔
لاک ڈاو¿ن کی خلاف ورزی کرنے والوں کو مادھو کالج عارضی جیل میں بند کیا گیا تھا۔ جہاں اے ایس پی اور اے ڈی ایم پہنچے اور ان لوگوں سے اٹھک بیٹھک بھی کروائی ۔اے ایس پی اور اے ڈی ایم نے ایک اجلاس طلب کیا – اے ایس پی جناب روپیش دویدی ، اے ڈی ایم جناب آر پی تیواری نے شہر میں پولیس کی جانب سے کی جارہی کارروائیوںکا معائنہ کیا۔ اس کے بعد دونوں افسران ماد ھو کالج پہنچے۔یہاں ، مختلف کمروں میں رہنے والے لوگوں کو لاک ڈاو¿ن کی پیروی کرنے اور بغیر کسی کام کے سڑکوں کو گھومنے سے گریز کرنے کی صلاح دی ۔ یہاں پر اے ایس پی نے راہداری میں بیٹھے نوجوانوں کی گنتی کرکے ایک میٹنگ کی اور پولیس اہلکاروں کو بھی ہدایت دی کہ وہ تمام لوگوں کے نام ، پتے ، موبائل نمبر لکھ کر دفعہ 151 کے تحت کارروائی کریں۔