بی سی سی آئی نے آئی پی ایل کو کیا ملتوی

ممبئی، 16 اپریل (یو این آئی ) ہندستانی کرکٹ كٹرول بورڈ (بی سی سی آئی) نے عالمی وبا بن چکے کورونا وائرس کے خطرے کی وجہ سے ملک بھر میں لاک ڈاؤن کے تین مئی تک بڑھنے کے سبب انڈین پریمیئر لیگ (آئی پی ایل) کے 13 ویں ورژن کو غیر معینہ مدت کے لئے ملتوی کرنے کا جمعرات کو سرکاری طور پر اعلان کر دیا۔
آئی پی ایل کا انعقاد 29 مارچ سے ہونا تھا لیکن پہلے لگائے گئے لاک ڈاؤن کی وجہ سے بی سی سی آئی نے پہلے آئی پی ایل کو 15 اپریل تک ملتوی کرنے کا اعلان کیا تھا۔وزیر اعظم نریندر مودی کے منگل کو لاک ڈاؤن کو تین مئی تک بڑھانے کے بعد آئی پی ایل کو بدھ کو غیر معینہ مدت کے لئے ملتوی کرنے کا فیصلہ کیا گیا لیکن بی سی سی آئی نے اس کا سرکاری طور پر اعلان نہیں کیا تھا۔ کئی فرنچائزز ٹیموں نے اس کی تصدیق کر دی تھی کہ آئی پی ایل -13 ملتوی کر دیا گیا ہے۔
بی سی سی آئی کی آرگنائزنگ کونسل نے جمعرات کو اگلے حکم تک آئی پی ایل ملتوی کرنے کا اعلان کیا لیکن اس نے اس کے لئے کسی نئی ونڈو کو اعلان نہیں کیا۔ بی سی سی آئی نے ایک بیان میں کہا کہ ملک اور اس عظیم کھیل سے وابستہ لوگوں کی صحت اور حفاظت ہماری اولین ترجیح ہے۔ بی سی سی آئی، فرانچائزز مالک، براڈکاسٹر، اسپانسر اور تمام متعلقین کا اتفاق کے ساتھ خیال ہے کہ آئی پی ایل 2020 سیزن تبھی شروع کیا جائے گا جب حالات اس کے لئے عام اور محفوظ ہوں گے۔
کرکٹ بورڈ نے کہا کہ بی سی سی آئی پوزیشن پر قریبی نگرانی رکھے گا اور حالات کا جائزہ لیتا رہے گا۔وہ ساتھ ہی حکومت ہند، ریاستی حکومت اور دیگر ریاستی قوانین اداروں سے ہدایات لیتا رہے گا کہ اسے شروع کرنے کی ممکنہ تاریخ کیا ہوگی۔
آئی پی ایل کے چیف آپریٹنگ آفیسر هیمانگ امین نے کل صبح تمام آٹھ فرنچائزز ٹیموں کو اس فیصلے کی جانکاری دی تھی۔هیمانگ نے بتایا تھا کہ لاک ڈاؤن تین مئی تک بڑھنے کی وجہ سے آئی پی ایل کے فی الحال منعقد ہونے کا کوئی امکان نہیں ہے اور اسے غیر معینہ مدت کے لئے ملتوی کیا جا رہا ہے۔
بی سی سی آئی کے صدر سورو گنگولی کی قیادت میں منگل کی شام کانفرنس کال کے ذریعے بی سی سی آئی کے اعلی حکام کے درمیان آئی پی ایل کے انعقاد اور مستقبل کے تعلق سے بات چیت ہوئی تھی۔ اس میں گنگولی کے علاوہ سیکرٹری جے شاہ، آئی پی ایل کے چئرمین برجیش پٹیل، خزانچی ارون دھومل اور هیمانگ شامل تھے۔