Naya Nazariya Urdu Daily from Ujjain

وجئے لکشمی سادَھو کا بی جے پی پر وار، کہا ملک کو جملے نہیں ترقیات چاہئے

Thumb

اندور:11 اپریل (نیانظریہ بیورو) لوک سبھا انتخابات 2019 کے لئے بی جے پی کے ذریعہ جاری کئے گئے سنکلپ پتر کو وزیر وجے لکشمی سادھو نے محض جملے بازی قرار دیا ہے۔ بی جے پی کو کٹگھرے میں کھڑا کرتے ہوئے سادھو نے کہا کہ ملک جملوں پر نہیں ترقیات پر چلتا ہے۔ انہوں نے پوچھا کہ کیا ہوا ان وعدوں کا جن کے تحت 15 لاکھ اور سالانہ دو کروڑ لوگوں کو روزگار دینے کی بات کہی گئی تھی۔
ذرائع کے مطابق اندور پہنچیں وزیروجے لکشمی سادھو نے کہا کہ جب انکے والد ایم ایل اے تھے تب بی جے پی نے کسانوں کو سوئی دینے سے لیکر ٹریکٹر دینے کے دعوے کئے تھے، جو آج تک پورے نہیں ہوئے۔ بڑواہ میں جب اس وقت کے بی جے پی قومی صدر راجناتھ سنگھ آئے تھے، تب انہوں نے کہا تھا مدھیہ پردیش میں بی جے پی کی حکومت بننے پر کسانوں کے 51 ہزار تک کے قرض معاف کئے جا ئینگے، لیکن شیوراج حکومت بننے کے بعد کچھ نہیں ہوا۔
ریاست کی وزیرثقافت نے کہا کہ بی جے پی کے لوگ جملے باز ہیں۔ انہوں نے کہا مودی جی نے اپنے خاص 15-20 لوگوں کا قرض معاف کیا ہے۔ باقی ملک کی عوام کو جی ایس ٹی اور نوٹ بندی کی پریشانی میں جھونک دیا۔ اتنا ہی نہیں جب ان سے انٹرویو کے دوران میڈیا کے لوگ پوچھتے ہیں کہ انتخابی وعدوں کا کیا ہوا تو بی جے پی کے لیڈرقبول کرتے ہیں کہ رام مندر اوردفعہ 370 ہٹانے جیسی باتیں بی جے پی کے ایجنڈے نہیں بلکہ انتخابی اعلان تھا۔
وجے لکشمی سادھو نے مزید کہا کہ ملک کی عوام انتخابی جملے بازی نہیں، کام مانگتی ہے۔ نوجوان روزگار مانگتا ہے۔ کسان اپنی پیداوار کا مناسب قیمت مانگتا ہے۔ عوام ملک کی ترقی مانگتی ہے، لیکن بی جے پی اسکے بدلے میں جملے بازی کرتی ہے۔ اس مرتبہ عوام سمجھ چکی ہے کہ بی جے پی کے جملوں کی کتنی سچائی ہے۔

Ads