Naya Nazariya Urdu Daily from Ujjain

آزادا انتخاب لڑنے والے کانگریس لیڈران کی پارٹی میں ہو گی واپسی

Thumb

اُجین11اپریل(نیا نظریہ بیورو) اسمبلی انتخابات میں ٹکٹ نہیں ملنے پر آزادا امیدوار کے طور پر الیکشن لڑنے والے امیدوار وں کی کانگریس پا رٹی میں واپسی تقریباً طے مانی جا رہی ہے ۔لیکن اس بابت پارٹی کے اعلیٰ کمان کی جانب سے کوئی اعلان نہیں کیا گیا ہے ۔آزادامیدواروں کی دوبارہ وا پسی کی کانگریس کے کچھ لیڈران مخالفت کر رہے ہیں جبکہ کچھ کا کہنا ہے کہ آزاد انتخابات لڑنے والوں کی واپسی کا فیصلہ پارٹی کو کرنا ہے۔ اسمبلی انتخابات میں اُ جین شمال سے محترمہ مایا راجیش ترویدی ،اُجین جنو ب سے جناب جے سنگھ دربار اور مہد پور اسمبلی حلقے سے جناب دنیش جین بوس آزاد امیدوار کے طور پراسمبلی انتخابات میں الیکشن لڑ چکے ہیں۔ اس لئے مذکورہ تینوں اسمبلی حلقوں میں کانگریس امیدواروں کو شکست کا سامنا کر نا پڑا ہے ۔ کانگریس کے امیدواروں اورحامیوں کا ماننا ہے کہ ماضی میں آزادامیدواروں کی وجہ سے ہی پارٹی کو شکست ہوئی ہے اس لئے آزادانہ طور پر انتخابات لڑنے والے امیدواروں کو پارٹی میں شامل نہیں کرنا چائیے ۔اس بابت ماضی میں ایک پریس کانفرنس منعقد کی گئی تھی اس میں سینئر کانگریس لیڈر جناب مہاویر پرساد وششٹھ ، سابق ایم ایل اے جناب راجندری وششٹھ وغیرہ نے صاف طور پر واضع کیا تھا کہ آزا د امیدواروں کو پارٹی میں قطعی شامل نہیں کر نا چائیے ۔ چھندواڑا میں کانگریس کے لوک سبھا کے ا میدوار جناب نکل ناتھ اور وزیر اعلیٰ جناب کمل ناتھ کے پرچہ نامزدگی داخل کرنے کے دوران شہر کے مختلف جگہوں سے بہت سے لیڈران چھندواڑا پہنچے تھے ۔ اس میں سابق ایم ایل اے ڈاکٹر بٹک شنکر جوشی ، ایم ایل اے جناب مہیش پرماروغیرہ کے نام شامل ہیں۔ اس کے علاوہ اسمبلی انتخابات میں آزاد امیدوار کے طور پرالیکشن لڑنے وا لیمحترمہ مایا راجیش ترویدی بھی اپنے حامیوں کے ساتھ چھندواڑا پہنچی تھیں ۔ ضلع کانگریس دیہی کے سابق صدر جناب جئے سنگھ دربار کا کہنا ہے کہ کانگریس کے سینئر لیڈران نے کہا کہ سبھی لوگ متحد ہو کر پارٹی کیلئے کام کرو۔اسی لئے سبھی کی واپسی تقریباً طے مانی جا رہی ہے ۔ ان تمام لوگوں کی واپسی کب تک ہو گی ابھی اس بات کا خلاصہ نہیں ہوا ہے ان کے مستقبل کا فیصلہ بھوپال کے سینئر لیڈران ہی طے کریں گے۔

Ads