پرائیویٹ ڈاکٹرس سوشل ڈسٹےنسنگ پر عمل کر اپنا کلینک چلا سکتے ہیں :کمشنر جناب آنند کمار


اُجین 13 اپریل(نیا نظریہ بیورو) کمشنر جناب آنند کمار شرما نے پیر کو منعقد ہ اجلاس میںکورونا وائرس کو لے کر اور زیادہ سے زیادہ عوام کیلئے بیداری مہم چلانے کی ہدایات دیں۔انہوں نے مزید کہا کہ ابھی بھی لوگوں کو معاشرتی فاصلہ بنانے کی اہمیت بتانے کی ضرورت ہے۔ اجلاس میں ، بڑھتی ہوئی سردی ، کھانسی اور نزلہ زدہ مریضوں کے پیش نظر ، انہوں نے انہیں علاج معالجے کی سہولیات فراہم کرنے کی ہدایت دی اور کہا کہ پرائیویٹ ڈاکٹر معاشرتی فاصلے کے بعد اپنے پرائیویٹ کلینک چلا سکیں گے۔ چیف میڈیکل اینڈ ہیلتھ آفیسر پرائیویٹ ڈاکٹروں کو این- 95 ماسک فراہم کر یں ۔ کمشنر نے ہدایت دی کہ لاک ڈا¶ن کے عرصہ میں لوگوں کو رقم کی ضرورت ہے۔ اس کو مد نظر رکھتے ہوئے ، تمام بینکوں کو صبح 10 بجے سے شام 4 بجے تک کھولا جائے گا۔ بینک میں معاشرتی دوری کی سختی سے عمل کرایا جائے گا۔ کمشنر نے ہدایات دیں کہ جو علاقے کنٹےنمےٹ اعلان ہو چکے ہیں ، وہاں بینک بند رہیں گے۔ بینک کنٹینمنٹ ایریا میں اپنے بی سی کے ذریعے لوگوں کو پنشن اور دیگر فنڈز مہیا کرائیں گے۔ بی سی کے بارے میں ، کمشنر نے ہدایت دی کہ بی سی کو ایک گاڑی مہیا کرائی جائے گی۔ کنٹینمنٹ علاقے میں گاڑی کے ذریعے اعلان کیا جائے گا ، تاکہ لوگوں کو معاشرتی فاصلے پر عمل کرکے پیسہ مل سکے۔ کمشنر نے ایل ڈی ایم کو ہدایت دی کہ ضلع کے تمام اے ٹی ایم مستقل طور پر چلائیں ۔ کوئی بھی اے ٹی ایم بند نہیں ہونے چاہئے۔ لوگ ضرورت پڑنے پر اے ٹی ایم سے فنڈز نکال سکتے ہیں۔کمشنر نے ہدایت دی کہ دیہی علاقوں کے تاجر اپنی لوڈر گاڑیوں سے شہر آسکیں گے اور ضروری سامان لے جاسکتے ہیں۔ اس کے لئے ان تاجروں کو اجازت نامے دیئے جائیں گے۔ کوآرڈینیشن کے لئے دوایس او بھی مقرر کیے جائیں گے۔ قابل ذکر ہے کہ کمشنر نے آگاہ کیا کہ اب گا¶ں میں ضروری گروسری اشیاءکی کمی بھی ظاہر ہو رہی ہے۔ کمشنر نے ایڈیشنل کلکٹر جناب شتج سنگھل کو ہدایت دی کہ وہ آئی ایم اے کے صدر سے بات کریں اور زکام ، کھانسی کے لئے خصوصی ڈاکٹروں کو کال کریں ، تاکہ ڈاکٹر نزلہ ، کھانسی اور نزلہ زکام کے علاج کے لئے کنٹینمنٹ ایریا کا دورہ کرسکے ۔ کمشنر نے کہا کہ کورونا وائرس سے احتیاطی تدابیر اختیار کرنے کی ضرورت ہے۔ اس کے لئے معاشرتی دوری پر عمل کرنا لازمی ہے۔ جن خاندانوں میںکورونا وائرس کی علامات پائے گئے ہیں ، وہ ہوم کوارےنٹائن میں ہیں۔ اس دوران انہیں سمجھا یا گیا ہے کہ وہ ضروری صاف – صفائی پر توجہ رکھیں ، لوگوں سے نہ ملیں اور ضروری فاصلے بنا ئے رکھیں۔ ایسے خاندانوں کے پڑوسی بھی خصوصی صحت کی نگرانی میں ہیں۔ کمشنر نے میونسپل کارپوریشن کمشنر جناب رشی گرگ کو ہدایت دی کہ وہ کورونا وائرس کے تئیںزیادہ احتیاط برتنے کے لئے پےمپلےٹ چھپوا ئیں اور آڈیو میسج کی ذریعہ کورونا کی تشہیر کریں ۔ کمشنر نے بتایا کہ بڑے کٹےنمےٹ ایریا میں چھوٹے – چھوٹے کٹےنمےٹ بنا کرلوگوں کے سےمپل لئے جا رہے ہیں۔ مقصد یہ ہے کہ اب جو بھی شخص کورونا سے متاثر ہے ، اس کی فوری معلومات حاصل کرنی چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ پی پی ای کٹس کی مانگ مستقل آرہی ہے۔ اس وجہ سے ، پی پی ای کٹس کی تعداد میں اضافہ کیا جارہا ہے۔ اب آر ڈی گارڈی اسپتال میں سیمپلنگ بھی کی جائے گی۔ پہلے مرحلے میں ، 200 سے 300 لوگوں کے سردی – نزلہ زکام میں مبتلا افراد کے نمونے جلد ہی تفتیش کے لئے بھیجے جائیں گے ، تاکہ متاثرہ افراد کی معلومات بروقت سامنے آسکیں اور ان کا علاج ممکن ہوسکے۔ ایڈیشنل کلکٹر محترمہ بیدیشہ مکھرجی نے بتایا کہ تقریبا 1250 افراد میں عام سردی – کھانسی کی علامت ظاہر ہوئی تھی ، جنھیں گھر میں ہی آئیسولیٹ کر دیا گیا ہے۔ پرانا شہر زیادہ متاثر ہے۔کمشنر جناب شرما نے ہدایات دی کہ سبزی منڈی میں صبح غیر ضروری طور پربھیڑ نہ ہو ، اس کیلئے منڈی سیکرٹری اپنے ملازمین کی ڈیوٹی لگائیں۔ انہوں نے کمشنر میونسپل کارپوریشن کو ہدایت دی کہ سبزی فروخت کر رہے لوگوں کو بھی ہر چار سے پانچ دن بعد کورونا کی جانچ کرائی جائے۔ انہیں صابن اورسینٹائزرمہیا کرایا جانا چاہئے اور انہیں مشورہ دیا جانا چاہئے کہ سبزیاں بیچتے وقت وہ عوامی نل یا ہینڈ پمپ سے اپنے ہاتھ دھو لیں۔مادھو نگر اسپتال میں آ¶ٹ سورس عملے کو گزشتہ دو ماہ سے تنخواہ نہ ملنے پر کمشنر نے چیف میڈیکل اینڈ ہیلتھ آفیسر کو ہدایت دی کہ وہ اس بات کو یقینی بنائیں کہ ملازمین کو فوری طور پر ادائیگی کی جائے۔ بتایا گیا کہ پی ڈی ایس کے راشن کی بھی ہوم ڈلےوری کرائی جا رہی ہے۔میٹنگ میں انسپکٹر جنرل پولیس جناب راکیش گپتا ، کلکٹر جناب ششانک مشرا اورایس پی جناب سچن اتلکر نے بھی اپنی تجاویز پیش کیں۔ ایڈیشنل کلکٹر جناب آر پی تیواری ،جناب جی ایس ڈابر ، جناب شتج سنگھل اور جناب ایس ایس راوت بھی اس میٹنگ میں موجود رہے۔