اندور میںکورونا کے 22معاملہ آئے روشنی میں


کورونا سے ہلاک ہو ئے لوگوں کی تعداد ہوئی 33
مجموعی طور پر متاثرین کی تعداد ہوئی 328
اندور 13 اپریل (نیا نظریہ بیورو)کورونا سے سب سے زیادہ متاثر شہروں میں شامل اندور میں 328 متاثر ین ہو گئے ہیں۔ پیر کے روز ، 22 نئے کیس رپورٹ ہوئے ۔ ایک 42 سالہ شخص کی موت کی بھی تصدیق ہوئی۔ یہ ارو ندو اسپتال میں بھرتی تھا۔ ضلع میں ابھی تک اس وائرس سے 33 لوگوں کی جان گئی ہے۔ اس سے پہلے اتوار کی رات 8 متاثرہ ملے تھے۔ دو نے دم توڑ دیا تھا۔ اتوار کو جن لوگوں کی موت ہوئی تھی ، ان میں موتی طویلہ ساکن 70 سالہ بزرگ اور سومناتھ کی چال ساکن 65 سالہ بزرگ کے نام شامل ہیں۔ ہفتہ کو ان دونوں کی رپورٹ مثبت آئی ، لیکن اس سے پہلے ہی ان کی موت ہو چکی تھی۔ سی ایم ایچ او ڈاکٹر پروین جڑیا نے بتایا کہ اتوار کی رات جانچے گئے سیمپلوں میں 22 لوگ پازیٹیوپائے گئے ہیں۔ ابھی تک کل 35 لوگ ٹھیک ہوکر اپنے گھر جا چکے ہیں۔ ہم کینٹونمنٹ علاقے میں سروے کام کروا رہے ہیں۔ اتوار تک 16 ہزار سے زیادہ سروے ہو چکے ہیں۔ آشا ، آگن باڑی اور ٹیچرس کی ٹیم نے سروے کے دوران ڈھائی سو سے زیادہ مریض تلاش کئے ہیں۔ ڈاکٹروں کی جانب سے چیک کرنے پر 27 لوگ عام پائے گئے تھے ، جنہیں موقع پر ہی دوا دی گئی۔ جڑیا کے مطابق 1142 سیمپل انکوائری کے لئے دہلی بھیجے گئے ہیں۔ انکوائری رپورٹ میں مثبت مریضوں کا ڈیٹا بڑھ سکتا ہے۔ لہٰذا ہم نے ا سپتال میں بستر وںکی تعداد بڑھا لی ہے۔ 300 بیڈ والے انشورنس اسپتال کو تحویل کیا گیا ہے۔ چوئتھ رام کو بھی سرخ اور پیلے ژون میں رکھا گیا ہے۔ جو لوگ 14 دن سے کوارےنٹائن ہا¶س میں رہ رہے ہیں ، انہیں بھی ڈسچارج کرنے کا عمل شروع کر دیا گیاہے۔
اتوار کو نیل کنٹھ کالونی ساکن ریڈی میڈ تاجر چراغ بھنڈاری,عمر 37کی موت ہو گئی۔ سانس لینے میں تکلیف اور بخار کے سبب انہیں خصوصی اسپتال میں بھرتی کیا تھا۔کورونا کی خدشہ میں ان کی جانچ بھی ہوئی ، لیکن رپورٹ منفی آئی۔ لواحقین کے مطابق ، انہیں سات دن پہلے بخار آیا تھا۔ ان کی رپورٹ پیر تک آئے گی۔