حکومت آدھارکارڈ کی بنیاد پرلوگوں کوخوردنی اشیاءفراہم کرے :عارف مسعود

حکومت آدھارکارڈ کی بنیاد پرلوگوں کوخوردنی اشیاءفراہم کرے :عارف مسعود
لاک ڈاون کی مدت بڑھا نے سے قبل غریبوں کی پریشانیوں کومدنظررکھتے ہوئے اقدامات کئے جانے چاہئے
بھوپال:13اپریل (نیانظریہ بیورو)
گزشتہ بیس دنوں سے لاک ڈاو

ن ہے۔جس کی وجہ سے متوسط طبقے کے علاوہ خط افلاس سے نیچے زندگی بسرکرنے والے افرادمعاشی بحران سے زیادہ متاثرہوئے ہیں۔وہیں کورونا وائرس سے لڑائی جاری رکھتے ہوئے ملک کی عوام نے اپنابھرپورتعاون پیش کیاہے۔ساتھ ہی اپنی وسعت کے مطابق تمام صاحب حیثیت نے غرباءاورضرورت مندوں کی مددکی ہے۔اس پس منظرمیں اس مہلک وباسے نمٹنے کے لئے لاک ڈاو¿ن کی مدت میں ریاستی حکومت نے 30اپریل تک کااضافہ کیاہے۔اوراس مہلک وباءچھٹکاپانے کے لئے یہ ضروری بھی ہے۔لیکن اس دوران متوسط طبقے سمیت خط افلاس سے نیچے زندگی بسرکرنے والے افراد معاشی بحران کے بہت زیادہ شکارہورہے ہیں۔ان ضرورت مندوں کے ہمدردری کااظہارکرتے ہوئے راجدھانی کے مرکزی اسمبلی حلقے سے کانگریس ایم ایل اے عارف مسعود نے مدھیہ پردیش کے وزیر اعلی شیو راج سنگھ چوہان سے اپیل کی ہے ، 14 اپریل کے بعد بھی ، اگر لاک ڈاو¿ن کو آگے بڑھایا گیا ہے ، تو پھر غریبوں کی بھی فکر کریں اور سب سے پہلے حکومت کی طرف سے کھانے کی اشیاءکو آدھار کارڈ کی بنیاد پرمہیاکرایاا جائے۔اس کے تحت 10 کلو آٹا ، 5 کلو چاول ، 1 کلو سویابین آئل پیکٹ ، 2 کلو چینی اور سبزی ہر غریب کو دی جائے۔ساتھ ہی عارف مسعود نے کہا ہے کہ لاک ڈاو¿ن کی وجہ سے ، روزانہ کام کرنے والے غریبوں کو معاشی بحران لاحق ہے اور لوگ لاک ڈا و¿ن بڑھنے کی وجہ سے مزید پریشان ہونگے ۔اس لئے حکومت کے اس فیصلے کی وجہ سے تمام غریب خاندانوں پر معاشی بحران مزید گہرا ہوجائے گا۔اس لئے عارف مسعود نے مدھیہ پردیش کے وزیراعلیٰ شیوراج سنگھ چوہان نے درخواست کی ہے کہ لاک ڈاو¿ن کے دوران غریب خاندانوں کو ضروری اشیاءخوردونوش فراہم کرائیں۔تاکہ غریبوں کی پریشانی کچھ حدتک کم ہوسکے۔واضح رہے کہ لاک ڈاو¿ن کے پہلے دن سے عارف مسعود فینس کلب تقریبا20ہزار افراد کے لئے کھاناتقسیم کرانے کاانتظام کیا ہے۔جس کے تحت شہرکے مختلف علاقوں میں معاشی بحران کے شکار افرادکے گھرتک کھاناپہنچانے کاکام مسلسل جاری ہے۔اسی مہم کے تحت عارف مسعود فینس کلب کے ذریعہ قائم کئے گئے 7 کچن مراکز سے ہر روز 20 ہزار افراد کو کھانا پیش کیا جارہا ہے۔جومراکز انہوں نے پرانے اورنئے بھوپال میں قائم کئے ہیں۔تاکہ پورے اسمبلی حلقے کے ضرورت مندافرادکوفائدہ مل سکے۔