مودی کا فیصلہ، سب کچھ لٹا کر ہوش میں آئے تو کیا کیا: پردیپ جین


جھانسی، 19 نومبر: مرکزی حکومت کے تین زرعی قوانین کے نفاذ سے شروع ہونے والی سیاست وزیر اعظم کے جمعہ کو ان قوانین کو واپس لینے کا اعلان کرنے کے بعد بھی جاری ہے۔
اس پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے کانگریس کے سینئر لیڈر اور سابق مرکزی وزیر پردیپ جین آدتیہ نے کہا کہ تحریک کے دوران 600 سے زیادہ کسانوں کی موت ہوئی اور اب مودی جی نے اس قانون کو واپس لے لیا ہے۔
آخر آپ کو کیا ملا جب آپ سب کچھ لٹانے کے بعد ہوش میں آئے؟
وزیراعظم کے اس فیصلے سے ظاہر ہوتا ہے کہ صرف اس حکومت اور اس کے سربراہ کو باتوں کی سمجھ نہیں ہے۔