پستی ورسوائی سے نکلنے کیلئے علم کا سیکھنا لازمی! مولانا یعقوب بلند شہری


سہارنپور ( احمد رضا) مسلمانوں میں شعورختم ہوتا جارہا ہے اور غیر وں کے طرز عمل پر زندگی گزار رہے ہیں ، بیا ہ شادیوںمیں اسلامی طرز عمل کو چھوڑ کر مسلمان غیروں کے طریقہ پر اپنے بچوں کی بیاہ شادیاں کر رہا ہے اورحق تعالی کے احکامات و نبی کریم کی سنتوںکو کھلم کھلا پا مال کر ہاہے یہ ایک بہت بڑا لمحہ ¿ فکرہے آ ج کا مسلم طبقہ دینی ،عصری تعلیم و تربیت و اسلامی طرز عمل اپنے بچوں کو نہیں سکھارہا ہے بلکہ اپنے بچوںمیں مغربیت کی تہذیب کو اپنایا جارہاہے یہ عمل ملت اور ملک کیلئے خسارہ کا سبب ہے اپنے کہاکہ دینی طرز و فکر کو اپناﺅ اور فلاح پاﺅ!
آل انڈیا دینی مدارس بورڈ کے سرپرست اور مسلم اسکالر مولانا محمد یعقوب بلند شہر ی نے کل مغرب بعد اپنے ایک خصوصی پیغام میں مزید کہاکہ ہر ایک اور ماہ کے تیس دنوں میں اللہ کی رحمت، اللہ سے مغفرت اور جہنم کی آگ سے رہائی طلب کرو کوئی بھی پل بغیر عبادے خالی مت گزرنے دو یہ بڑا ہی بابرکت عمل ہے نماز فرض ہے تلاوت کلام اللہ اور ذکر بھی افضل عمل ہے مولانا یعقوب بلند شہری نے یہ بھی کہاکہ ملک کے مسلمان دینی علم کی کمی، ناخواندگی اور گمراہی کی وجہ سے پچھڑے پن اورپسماندگی کا شکار بنے ہیں مسلم قوم نے ابھی بھی اپنے بچے و بچیوں کے مستقبل کے لئے کوئی لا ئحہ عمل تیار نہیں کیا ہے ، آپنے کہا کہ مسلمانوں کی پریشانیوں کی اصل وجہ اپنے بچوں کی بیا ہ شادیوں میں فضول خرچی اور غیر اسلامی طریقہ اختیار کرنا ہی ہے ، انہوں نے کہا کہ جب تک مسلمان ایسی بیجا اسرا ف والی شادیوں کا بائی کاٹ نہیں کرے گا تب تک مسلمان فکر مند نہیں ہوگا ، انہوں نے کہا کہ نکاح و بیاہ شادیوں کوا ٓسان کیا جائے اوربیاہ شادیوں میں فضول خرچی نہ کی جائے بلکہ اس پیسہ کو غریب لوگوں کی بیٹیوں کے نکا ح پر لگایا جائے یہی اصل اسلامی فکر اور عمل ہے ! مولانا نے کہا کہ اگر مسلمان بیاہ شادیوں میں بڑھتی ہوئی رسومات اور فضول خرچی پر روک تھام نہیں کرےگا اور اس کا بائی کاٹ نہیں کرےگا تو مسلمان آنے والے وقت میں بیحد خسارہ میں ہوگا، انہوںنے فضول خرچی پر روک تھام، معاشرہ میں پھیلی ہوئی سنگین بیماریوںکے سدباب اور ملک و ملت میں تعلیمی پسماندگی کو دور کرنے کے لئے زور دیا مولانا محمد یعقوب بلند شہر ی نےکہا کہ مسلمانوں کی ترقی اور عزت و قار کے لئے تعلیم و تربیت کے ساتھ مسلم معاشرہ میں اصلاح معاشرہ تحریک چلانے کی سخت ضرورت ہے مولانا محمد یعقوب بلند شہر ی نے لوگوںکو اپنے بچوںکے روشن مستقبل کے لئے فکر مند کیا اور دینی تعلیم کے ساتھ ساتھ عصر ی و ٹیکنیکل علوم کوبھی حاصل کر نے پر زوردیا اور اپنے بچوں کی بیاہ شادیوںکو سادگی کے ساتھ سنت کے مطابق مسجدوںمیںکرنے کی تلقین کی مولانا بلند شہری نے کہا کہ اصلاح معاشرہ تحریک گھر گھر اورشہر در شہر پہنچانے کی پوری کوشش کی جائے گی ! فوٹو ۔۔۔۔۔۔۔ (۱) ۔۔۔۔مولانا یعقوب بلند شہری
مریضوں کا سستا اوربہتر علاج معالجوںکی ذ مہ داری! ڈاکٹر روش احمد
سہارنپور ( احمد رضا) کمشنری کے سینئر وکیل مرحوم کامریڈ عبید الرحمان کی یاد میں گزشتہ روز مقامی علاقہ رسول پور میں ایک فری طبی کیمپ کا شاندار سطح پر انعقاد کیاگیا جسمیں سیکڑوں مریضوں کی بلڈ شوگر، دل اور وائرل امراض کی معقول جانچ ہوگئی اور سہل صلاح ومشورے کے بعد مریضوں کو دوائیاں بھی تقسیم کی گئی ہیں اس فری میڈیکل کیمپ کا افتتاح صحافی نوازش خان کے دست مبارک سے ہوا سوشل سوسائٹی گاڑہ ایجوکیشنل سوسائٹی کی جانب سے اس فری میڈیکل کیمپ کی مکمل نگرانی روش احمد، محمد عرشی اور مستقیم انصاری کے ذریعہ کی گئی جسمیں ۰۸۱ سے زائد مریضوں کی جانچ ہوئی اور انکو دوائیاں بھی دیگئی ہیں اس خاص موقع پر سینئر وکیل مرحوم کامریڈ عبید الرحمان کے بیٹے روش احمد اور محمد عرشی نے واضع کیا کہ اللہ کے فضل وکرم سے ڈاکٹری کی جو قابل قدر تعلیم ہمکو اپنے والد بزرگوار کی محنت اور دعاﺅں ملی ہے اسکا سہی استعمال یہ ہے کہ ہم ہر اپنے پاس آنیوالے مریض کی بے لوث خد مت اور دیکھ بھال کرنا اپنا شعار بنائیں رزق دینیوالا اللہ ہے محنت کرنا ہمارا کام ہے، لائق تحسین ہومیوپیتھک ڈاکٹر روش احمد اور اسسٹنٹ ٹیچر محمد عرشی نے بیباک لہجہ میں واضع کیا کہ بیماروں کا بہتر اور معیاری علاج معالجوں کیساتھ ساتھ ہماری بھی ملی اجتماعی ذمہ داری ہے دنیا میں سبھی غریب نہی ہیںکچھ بہت امیر اور کچھ بہت غریب ہیں ہمکو دونوں کیساتھ یکسا برتاﺅ کرنا ہم پرلازم ہے !مفت طبی کیمپ کے دوران نامہ نگاروں سے کرتے ہوئے ڈاکٹر روش احمدنیکہاکہ مریضوںکاعلاج تعلیم یافتہ ڈاکٹرس پر فرض ہے ہمیں ہمیشہ بے لوث رہکربیماروں کا علاج سنجیدگی اور ہوش مندی کیساتھ کرنا چاہئے یہی ڈاکٹری کے پاک وشفاف پیشہ کی عظمت اور وقار ہے آپنے اعلان کیا کہ وہ ملت کے لئے اپنی مفت خدمات کے ساتھ ہر وقت حاضر ہیں مقامی کھاتہ کھیڑی نزد مظفری مسجد والی گلی واقع روش احمد کے کلینک پر ہمیشہ مریضوں کی بھیڑ رہتی ہیں آپ علاب بھی عمدہ طریقہ سے کرنا اپنا فریضہ مانتے ہیں! فوٹو۔۔۔۔۔۔ ۲۔۔۔۔ طبی کیمپ کا افتتاح