وزیر صحت پربھورام چودھری لاپتہ:کانگریس


بڑھتے ڈینگو پر اندورکارکنان نے جلایا وزیر کاپتلا،ڈھونڈنے والے کو 10ہزار دینے کا اعلان
اندور15نومبر(نیا نظریہ بیورو)ریاست کے وزیر صحت پربھورام چودھری لاپتہ! یہ سننے میں عجیب لگے لیکن کانگریس نے اندور میں کچھ ایسا ہی مظاہرہ کیا ہے۔کانگریس نے سی ایم ایچ اُو کے دفتر کے باہر مظاہرہ کرتے ہوئے وزیر صحت کا پتلا نذر آتش کیا۔ کانگریس نے ایک پوسٹر لگایا ہے جس میں انہیں ڈھونڈنے والے کو 10,000 روپے انعام دینے کا اعلان کیا گیا ہے۔ کانگریس کا استدلال ہے کہ ریاست کے ساتھ ساتھ شہر میں ڈینگو کے معاملات میں مسلسل اضافہ ہورہا ہے اور وزیر صحت اس پر کوئی توجہ نہیں دے رہے ہیں۔ وہ کافی عرصے سے لاپتہ ہیں۔
دراصل پیر کو کچھ کانگریسی اندور کے سی ایم ایچ او آفس پہنچے۔ ہاتھوں میں وزیر صحت کا پتلا لے کر پہنچے کانگریسیوں نے سی ایم ایچ اُو آفس کے باہر ریاستی وزیر صحت پربھورام چودھری کا پتلا رکھا۔جس پرلکھاپوری ریاست ڈینگو سے متاثر،وزیر صحت پربھورام چودھری غائب،ڈھونڈ کر لانے والے کو 10 ہزار انعام۔وزیر صحت کے اس پتلے کو کانگریسیوں نے سی ایم ایچ او آفس کے باہر ہی رکھا تاکہ یہاں آنے اور جانے والے لوگ دیکھ سکیں۔
ریاستی کانگریس کے سکریٹری وویک کھنڈیلوال، ترجمان گریش جوشی کا کہنا ہے کہ اندور کے ساتھ ساتھ ریاست میں ڈینگو مسلسل بڑھ رہا ہے۔ اندور ضلع کے کئی اسپتالوں میں جگہ بھی دستیاب نہیں ہے۔ کورونا کے دور میں بھی بی جے پی حکومت کی لاپرواہی سے لاکھوں لوگوں کی جانیں گئیں۔ آج پھر ہزاروں لوگ علاج نہ ہونے کی وجہ سے موت کے منہ پر کھڑے ہیں۔
یہاں محکمہ صحت غلط اعدادوشمار دینے میں مصروف ہے۔ ڈینگو جیسی بیماری میں اضافے کے باوجود آج تک وزیر صحت پربھو رام چودھری کا ایک بھی بیان سامنے نہیں آیا اور نہ ہی انہوں نے کوئی دورہ کیا، وہ لاپتہ ہوگئے ہیں۔ انہیں ڈھونڈنے والے کو 10 ہزار انعام دینے کا اعلان کیا ہے۔