ضلع انتظامیہ اور عوام کے تعاون سے دیواس میں کو رونا کو دی جا رہی شکست


دیواس 11اپریل (نیا نظریہ بیورو)دیواس شہر وہ زندہ دل شہر ہے اس سے پہلے بھی بہت سارے اتار چڑھاﺅ دیکھ چکا ہے لیکن ہر ماحول میں امن کا پتھر بن کراتحاد و بھائی چارے کی مثال کے طور پر ہندوستان کے نقشہ پر ابھرا۔
انتظامیہ اور عوام کے درمیان تال میل عمدہ
لاک ڈاﺅن کا 17 و یں دن انتظامیہ کی مستعدی نگاہیں ضلع کے لوگوں کا بھرپور تعاون کر رہی ہیں۔کوروناجیسی وبا کو بہت حد تک نہ پھیلانے دینے پر ابھی تک کامیاب ہوا ہے اس کا کریڈٹ پولیس محکمہ صحت کے ان لوگوں کو جاتا ہے جو دن رات ایک کئے ہوئے ہیں اور ہر شخص پر اور اس کے صحت پر نگاہیں گڑائے ہوئے ہیں ساتھ ہی عوام بھی اس کی حقدار ہے جس نے انتظامیہ کا بھرپور
تعاون کیا اور یہی وجہ ہے کہ آج بھی پورے شہر میں سناٹا تو چھایا پڑا ہے مگر امن ہے۔
ساڑھے سات کروڑکی آبادی والاشہر مدھیہ پردیش بھی کورونا بیماری سے لڑ رہا ہے ، اس کے باوجود سرکاری اعداد و شمار کے مطابق مدھیہ پردیش خود کو کورونا کی جنگ میں ایک جنگجو کے طور پر پیش کرنے میں کامیاب ہوا ہے اور اسی کا نتیجہ ہے کہ پوری ریاست میں اب تک 441 مریض ہی مثبت ہو پائے گئے ہیں اور موت کے اعداد و شمار بھی 31 کے آس پاس آکر تھم سا گیا ہے پاس کے شہروں کی ہم بات کریں تو اندور میں اب تک 235 مریض پازیٹیو پائے گئے ہیں وہی اُجین میں 15 اور بھوپال میں 99 اور دیواس میں دو متاثرہ مریض پائے گئے ہیں۔
دارالقضاءکی پہل کا پڑااثر
جونیئر شہر دیواس قاضی مولانا ابوالکلام فاروقی کی اس اپیل کا جس میں انہوں نے بھیڑ کی شکل میں مسلم سماج کو کہیں بھی جمع نہ ہونے مساجد میں نماز نہ پڑھنے محفلوں کو نہ سجانے اور قبرستان نہ جانے کی اپیل کی تھی ۔ اس کااثر ہوا کسی بھی مسجد میں کسی بھی تحصیل سے اب تک کوئی ا جتماعی جماعت اور نماز پڑھنے کی خبر انتظامیہ اور نہ ہی ہم تک پہنچی۔ اور تقریبا ًیہی صورتحال دوسرے معاشروں میں بھی دیکھنے کو ملتی ہے ، تمام مندر ، مٹھ ، گردوارے ، گرجا گھر بھی اپنے مکمل بندی کی تابعداری کر رہے ہیں اور شہر دیواس کورونا جیسے وبا کو پھیلنے سے روکنے میں کامیاب ہو چکا ہے۔
انتظامیہ کی جانب سے کی جا رہی کوششیں
انتظامیہ بھی اس وبا کو لے کر پہلے ہی دن سے آگاہ ہے انتظامیہ کی جانب سے تقریباً تمام فیکٹریوں کو چھوٹے چھوٹے کل پرزوں فیکٹریوں کو بند کروا دیا گیا ہے۔ مل رہے مثبت مریضوں اور ان کے رشتہ داروں کے گھروں کو آس پڑوسیوں کے مکانوں کو سےنیٹائز کیا جا رہا ہے۔پورے علاقے کی بےریکیٹنگ کرکے بلاک کر دیا گیا ہے شہر کے سبھی راستوں کو سیل کر دیا گیا ہے ، ہر آنے اور جانے والے شخص پر نگاہ رکھی جا رہی ہے ۔میونسپل کارپوریشن انتظامیہ کی جانب سے صحت کے انتظامات کو بہتر اور بہتر رکھنے کے لئے مستقل کوششیں بھی کی جارہی ہیں ، جس میں شہر کا ہر شہری اپنا بھر پور تعاون فراہم کر رہا ہے۔ یہی وجہ ہے کہ اب تک شہر میں امن و امان قائم ہے اور امید ہے کہ یہ صورتحال برقرار رہے گی۔