پیغمبر اسلام کی توہین کرنے پر اٹارسی میں جلایا گیا وسیم رضوی کا پتلا


ہوشنگ آباد12نومبر(عادل فاضلی)آج انجمن نورالاسلام کمیٹی اٹارسی کے زیراہتمام مسلم معاشرے کے لوگوں نے وسیم رضوی کا پتلا نذر آتش کیا گیا۔عارف خان سکریٹری ڈسٹرکٹ کانگریس کمیٹی نے بتایا کہ وسیم رضوی کی لکھی گئی کتاب میں نبی کریم صلی اللہ علےہ وسلم کی قابل اعتراض تصویر لگائی گئی ہے جو کہ بالکل غلط ہے۔ حکومت ہند کو اس کتاب پر پابندی لگانی چاہیے۔پورا مسلم معاشرہ رضوی کے اس فعل کی شدید مذمت کرتا ہے۔انجمن کمیٹی کے صدر گڈو بھائی نے بتایا کہ ہندوستان بہت پیارا ملک ہے اور اس کے اتحاد کو توڑنے والوں کو سزا ملنی چاہیے۔ سنی عیدگاہ مسجد کے امام اعظم رضا نے کہا کہ ملک میں سب مل کر کام کر رہے ہیں، یہ فعل قابل مذمت ہے۔
پتلا جلانے میں حافظ شاکر نوری صاحب،حافظ مختار صاحب، صدر حبیب کھتری،سیخ شکیل، عامر خان، شیخ فاروق،ستار بھائی، سید عدنان علی، عارف خان چشتی،معین رائن، عامر بھائی، فیروز بھائی، یعقوب خان،سنی عیدگاہ جامع مسجد گاندھی نگر اٹارسی،جامع مسجد اٹارسی،تنظیم اسلام المسلمین اٹارسی وغیرہ مسلم معاشرے کے لوگ بڑی تعداد میں موجود تھے۔