قومی اقلیتی کمیشن نے تریپورہ تشدد پر ریاستی حکومت سے جواب طلب کیا


نئی دہلی، 12 نومبر: قومی اقلیتی کمیشن نے تریپورہ میں اقلیتی برادری کے مذہبی مقامات اور ان کے مکانات، دکانوں پر حملے کے معاملے میں ریاستی حکومت کو نوٹس بھیج کر اس سے جواب طلب کیا ہے۔
قومی اقلیتی کمیشن کے چیئرمین اقبال سنگھ لال پورہ نے جمعہ کو یہاں نامہ نگاروں کو بتایا کہ تریپورہ میں اقلیتی برادری کے مذہبی مقامات اور دکانوں میں توڑ پھوڑ کے واقعہ کا از خود نوٹس لیتے ہوئے ریاست کے چیف سکریٹری سے جواب طلب کیا گیا ہے۔
انہوں نے کہا کہ انھیں اخبار کے ذریعے معلوم ہوا کہ مبینہ وشو ہندو پریشد کی ریلی کے دوران شمالی تریپورہ کے پانی ساگر سب ڈویژن میں اقلیتوں کے ایک مذہبی مقام، تین مکانوں اور کچھ دکانوں پر حملہ کیا گیا تھا۔