حمیدیہ اسپتال حادثہ پر حکومت کی کارروائی:


جی ایم سی کے ڈین، حمیدیہ اور کملا نہرو سپرنٹنڈنٹ کو کیا گیا معطل،ڈاکٹر اروند رائے بنے نئے ڈین
بھوپال10نومبر(نیا نظریہ بیورو)بھوپال کے حمیدیہ اسپتال حادثے کے بعد حکومت نے ایکشن لیا ہے۔ بدھ کو وزیر اعلیٰ شیوراج سنگھ چوہان سے ملاقات کے بعدوزیر طبی تعلیم وشواس سارنگ نے بتایا کہ گاندھی میڈیکل کالج (جی ایم سی) کے ڈین ڈاکٹر جتیندر شکلا، حمیدیہ کے سپرنٹنڈنٹ ڈاکٹر لوکیندر دوے، کملا نہرو اسپتال کے سپرنٹنڈنٹ کے کے دُبے کو عہدہ سے ہٹا دیا گیا ہے۔اس کے ساتھ ہی کملا نہرو اسپتال کی دیکھ بھال کا کام دیکھنے والی ایجنسی سی پی اے کی الیکٹریکل برانچ کے ڈپٹی انجینئر اودھیش بھدوریا کو بھی معطل کر دیا گیا ہے۔ یہ حکم فوری طور پر نافذ العمل ہو گیا ہے۔
اس کارروائی کے بعد اب سرجری ڈپارٹمنٹ کے ایچ اُو ڈی ڈاکٹر اروند رائے جی ایم سی کے نئے ڈین ہو ںگے۔ اس کے علاوہ حمیدیہ اسپتال کے نئے سپرنٹنڈنٹ کی ذمہ داری ڈاکٹر دیپک ماراوی کو سونپی جا سکتی ہے۔ ڈاکٹر مراوی آرتھوپیڈک کے سینئر ڈاکٹر ہیں۔
سارنگ نے کہا کہ وزیر اعلیٰ نے ہدایت دی ہے کہ میڈیکل ڈیپارٹمنٹ کا اپنا سول ونگ ہو گا جو میڈیکل کالج اور اس سے منسلک اسپتال کی دیکھ بھال سے متعلق کام کرے گا۔ ابھی کملا نہرو اسپتال کی دیکھ بھال کا کام سی پی اے سے لے کر پبلک ورکس ڈیپارٹمنٹ (پی ڈبلیو ڈی) کو سونپا گیا تھا۔ سارنگ نے کہا کہ میڈیکل کالج کا سول ونگ بننے تک یہ انتظام عارضی رہے گا۔
سارنگ نے کہا کہ وزیر اعلیٰ نے سرکاری اور نجی اسپتالوں میں فائر اینڈ الیکٹرک سیفٹی آڈٹ کو یقینی بنانے کی ہدایات دی ہیں۔ اس کے تحت اگلے 10 دنوں میں ہر ضلع کے کلکٹر میڈیکل کالجوں، سرکاری اسپتالوں اور پرائیویٹ اسپتالوں کے حفاظتی معیارات کا جائزہ لیں گے۔ ہر قسم کے سیفٹی آڈٹ کو یقینی بنائے گا۔
سارنگ نے کہا کہ وزیر اعلیٰ کی طرف سے واضح ہدایت ہے کہ ایسا واقعہ دوبارہ نہ ہو، اس کو یقینی بنایا جائے۔ اس وقت بیشتر میڈیکل کالجوں، سرکاری اور نجی اسپتالوں میں آکسیجن لائنیں بچھائی گئی ہیں۔ اس کے پیش نظر وزیر اعلیٰ نے ہدایات دی ہیں کہ ماہرین کی رائے لے کر سیکورٹی کے کن معیارات پر عمل درآمد یقینی بنایا جائے۔
بتادیں کہ وزیر اعلیٰ شیوراج سنگھ چوہان نے بدھ کی صبح حمیدیہ اسپتال کے واقعے کو لے کر میٹنگ بلائی تھی۔ اس میں حکومت کی جانب سے تعینات تفتیشی افسر اے سی ایس محمد سلیمان سے رپورٹ طلب کی گئی۔ اس کے بعد وزیراعلیٰ نے کارروائی کی ہدایات دیں۔ میٹنگ میں وزیر پربھورام چودھری، طبی تعلیم کے وزیر وشواس سارنگ، وزیر داخلہ نروتم مشرا، بھوپال انچارج بھوپیندر سنگھ، چیف سکریٹری اور متعلقہ محکمے کے افسران موجود تھے۔