محکمہ صحت کے عملے میں بھی کوروناکاخطرہ ، انتظامیہ کی تشویش میںاضافہ


بھوپال:8اپریل(نیانظریہ بیورو)
مدھیہ پردیش میں کورونا وائرس کی روک تھام کے لئے جنگ جاری ہے ، لیکن راجدھانی بھوپال میں صحت کارکنوں کی ایک بڑی تعداد کو کورونا سے متاثر ہونے کے پائے جانے کے بعد محکمہ اور حکومت دونوں کے خدشات بڑھ گئے ہیں۔ محکمہ متاثرہ ملازمین سے رابطہ کی تاریخ اورفہرست کوکھنگال رہاہے ۔واضح رہے کہ راجدھانی میں اب تک 85 افراد کورونا سے متاثر ہوئے ہیں۔ ان میں محکمہ صحت کے بھی بہت سے عہدیدار شامل ہیں۔ اس کی مدد سے زمینی سطح پر کام کرنے والے مزدوروں کے بھی انفکشن ہونے کی تصدیق ہوگئی ہے۔ ان سب کو تنہائی(طبی قید) میں رکھا گیا ہے۔واضح رہے کہ ہیلتھ کمشنر فیض احمد قدوائی نے کہا ہے کہ نظامت صحت میں افسران اور ملازمین کی ایک بڑی تعداد سے کورونا انفیکشنسے متاثر ہونے کی وجوہات کی بنا پر تفتیش کی جارہی ہے۔ ضلع انتظامیہ کو ہدایت کی گئی ہے کہ وہ ان کے رابطہ کی تاریخ کی چھان بین کریں۔ مقررہ پروٹوکول کے مطابق معلومات حاصل کرنے کے بعد ہی ضروری کارروائی کی جائے گی۔فیض احمدقدوائی نے کہا کہ باہمی رابطے کے ذریعے ہی کورونا انفیکشن میں اضافہ ہوتا ہے۔ لہذا ، متاثرہ افراد نے کس تاریخ میںدیگرافرادسے ملاقات کی اور اس کا آغاز کس جگہ سے ہوا اس کاپتہ لگانا ضروری ہے۔ اس کے لئے کام شروع کردایاگیاہے ۔ انہوں نے کہا کہ اس کا پتہ لگانا ہوگا جہاں سے ہیلتھ ڈائریکٹوریٹ میں کام شروع ہوا تھا۔ جب تک متعلقہ فرد اپنے رابطوں کی ترتیب کی تفصیلات نہیں دے گا تب تک کچھ کہنا مشکل ہے۔قدوائی نے کہا کہ کورونا انفیکشن سے متعلق پروٹوکول کے مطابق ضلعی انتظامیہ معلومات اکٹھا کررہی ہے۔ اس کے بعد ہی ذمہ داری کا تعین کرنے کے بعد کارروائی کی جاسکتی ہے۔