ریاستی ملازمین کے مہنگائی بھتہ سے متعلق کمل ناتھ نے پھر لکھا شیوراج کو خط


بھوپال:7اپریل(نیانظریہ بیورو)
کورونا قہر کے انفیکشن کے دوران سابق وزیر اعلیٰ کمل ناتھ بھلے ہی ایک بھی مرتبہ نہ دکھائی دیئے ہوں ،لیکن ان کا وزیراعلیٰ شیوراج سنگھ چوہان کے ساتھ خطوط کا سلسلہ جاری ہے۔ تازہ خط میں انہوں نے شیوراج حکومت کے ذریعہ افسران اور ملازمین کو دیئے گئے 5%مہنگائی بھتے کو ملتوی کرنے کی مخالفت کی۔ خط میں انہوں نے لکھا کہ میری حکومت کے ذریعہ16مارچ 2020کو چھٹے اور ساتویں پے اسکیل کی شکل میں 164%اور 17%مہنگائی بھتہ منظور کیا تھا ، لیکن آپ کی حکومت کے ذریعہ اس ملازمین کے مفاد کے فیصلے کو رد کرنے کا فیصلہ ایک طرفہ اور غلط ہے۔ کمل ناتھ نے شیوراج سے سوال کیا ہے کہ ایک انتخاب کی ہوئی حکومت کے فیصلے پلٹ کرکیا آپ کی حکومت ملازمین سے بدلہ لے رہی ہے۔ میں اور میری پارٹی ایسے فیصلے کا سڑک سے لے کر سدن مخالفت کرے گی۔ آخر میں ایک مرتبہ پھر کمل ناتھ نے وزیراعلیٰ شیوراج سنگھ چوہان سے گذارش کی ہے کہ وہ ملازمین کے مفاد کے فیصلے کو واپس نہ لیں اور کورونا کے قہر کی اس سنگیں حالات میں ملازمین کو راحت پہنچائیں۔ حالانکہ پہلے ہی شیوراج یہ واضح کرچکے ہیں کہ مہنگائی بھتہ صرف ملتوی کی گئی ، رد نہیں۔