*جمعیت علماء مدھیہ پردیش نے عربی زبان کے ساتھ ساتھ ہندی اور ہر زبان میں قران سکھانے کی شروع کی مہمم دے رہے قرآن بطور تحفہ* بھوپال جمعیت علماء مدھیہ پردیش کے پریس سیکرٹری حاجی محمّد عمران اور ٹیم کے ذریعے مدھیہ پردیش جمیعت علماء کے صدر حاجی محمد ہارون کی قیادت میں قران سکھانے کی جو مہم شروع کی گئی ہے وہ وقت کی ضرورت ہے *آؤ قرآن پڑھیں اور سمجھیں*


جمعیت علماء نے لوگو کو عربی زبان سکھانے کے ساتھ ساتھ جب تک جو زبان آتی ہو اس زبان میں قرآن پڑھنے کی بیداری مہم شروع کی ہے عربی زبان میں قران سکھانے اور انگلش ہندی قرآن بطور تحفہ پیش کرنے کی مہم شروع کی ہے تا کی قرآن کی تلاوت اور سمجھنے میں لوگوں کے سامنے زبان کسی قسم کی مشکل نہ بنے اور عربی سیکھنے کے ساتھ ساتھ جب تک جو زبان آتی ہے اس زبان میں لوگ قران کریم پڑھیں اور اپنی زندگی کو کامیابی کی طرف لے جائیں
بھوپال راجدھانی کو علم و ادب ، تہذیب و تمدن اور اسلامی علوم کا گہوارہ کہا جاتا ہے ، لیکن یہاں پر مسلم سماج کی ایک بڑی تعداد ایسی ہے اور جنہوں نے اپنی زندگی کا بڑا حصہ اس انتظار میں گزاردیا کہ کوئی انہیں عربی زبان سکھانے والا مل جائے تو وہ قران پڑھ سکیں ۔ جمعیت علماء مدھیہ پردیش نے ایسے لوگوں کو جو عربی زبان سے نا واقف ہیں لیکن مقامی زبان یعنی ہندی اور اردو انگلش زبان سے واقف ہیں ان کے لئے مقامی زبان ہندی اور اردو انگلش میں قران کا درس دینے کا سلسلہ شروع کیا ہے ۔
مدھیہ پردیش جمیعت علماء کے پریس سکریٹری حاجی محمد عمران بتایا کہ ہم نے تعلیم کے ایک سروے میں دیکھا کہ مسلم کمیونٹی میں ایسے لوگوں کی ایک بڑی تعداد ہے ، جو قران کو پڑھنا چاہتے ہیں ، لیکن ان کی مشکل یہ ہے کہ وہ عربی زبان نہیں جانتے ہیں ، ایسے لوگوں میں مرد وخواتین کے ساتھ سبھی عمروں کے لوگ موجود ہیں۔ ایسے لوگوں کی ضرورت کو دیکھتے ہوئے جمعیت علماء نے آؤ قران سیکھیں کے عنوان سے مہم شروع کی ہے اور ان لوگوں کو جو عربی زبان سے نا واقف ہیں انہیں ہندی انگلش میں قران پاک مہیا کرنے کا سلسلہ شروع کیا ہے اور جمعیت کی جانب سے قرآن بطور تحفہ دیا جا رہا ہے ۔ تاکہ وہ ہندی انگلش زبان میں قران سیکھ سکیں اور اس کے ساتھ اس بات کی بھی ہدایت کی جا رہی ہے کہ انہیں جب بھی موقع ملے وہ عربی زبان کو بھی سیکھ کر اپنی زندگیوں کو منور کریں۔

حاجی محمّد عمران کہتے ہیں کہ مدھیہ پردیش جمعیت علماء کے صدر حاجی محمد ہارون کی قیادت میں قران سکھانے کی جو مہم شروع کی گئی ہے وہ وقت کی ضرورت ہے۔ قران سبھی کے لئے ہے اور اس کی تعلیمات رہتی دنیا تک کے لئے ہیں اور اب تو اتنی آسانی ہوگئی ہے کہ قران عربی زبان کے علاوہ دنیا کی بیشتر زبانوں میں موجود ہے ۔ایسے میں وہ لوگ جو عربی زبان سے نا واقف ہیں اور قران کو سیکھنا اورپڑھنا چاہتے ہیں ان کو ہندی میں قران مہیا کرنا اہم قدم ہے اور لوگوں نے اسے خندہ پیشانی سے قبول کیا ہے ۔
وہیں جمعیت کی جانب سے قرآن بطور تحفہ حاصل کرنے والے محمد رضوان کہتے ہیں کہ میں زندگی کی پچاس بہاریں دیکھ چکا ہوں اورقران پڑھنے کی بڑی خواہش تھی لیکن عربی زبان نہیں جاننے کے سبب اب تک قران کی تعلیم سے دور رہا ۔ حالانکہ میں ہندی میں اپنے سارے کام کر لیتاہوں ۔ آج مجھے ہندی میں قران مہیا کرایا گیا ہے ۔ ان شا اللہ اب اسے پڑھ کر اس کی تعلیم کو اپنے اندر اتارنے کی پوری کوشش کرونگا اور دیرینہ خواب پورے ہونگے۔
وہیں فریحہ کہتی ہیں کہ قران ہندی زبان میں ہے ، اس کے بارے میں ہمیں کوئی اطلاع نہیں تھی۔ ہم نے زندگی کے چالیس سال اس انتظار میں نکال دئے کہ کوئی عربی زبان سکھانے والا ملے تو ہم قران پڑھیں ۔ آج ہمارے ہی نہیں ہمارے ساتھ جو بہنیں یہاں آئی ہیں نیلوفر ،شبانہ وغیرہ کے بھی ادھورے خواب پورے ہوئے ہیں ۔اب ہم ہندی زبان میں قران کی آیات اور دعائیں سیکھ کر اپنی نماز تو درست کر سکیں گے ۔

جمعیت علماء کے حاجی عمران کہتے ہیں کہ ابھی ابتدائی طور پر ہندی اردو اور دیگر مقامی زبانوں میں قران کو فراہم کرنے کی مہم بھوپال سے شروع کی گئی ہے ، لیکن جس طرح سے اس کا ریسپانس مل رہا ہے ، اسے دیکھتے ہوئے ایسا محسوس ہوتا ہے کہ ایسے لوگوں کی بڑی تعداد میں مدھیہ پردیش میں موجود ہیں جو عربی زبان نہیں جاننے کے سبب قران کی تعلیم سے دور ہیں ۔ ایسے لوگوں تک ہندی اردو اور دیگر مقامی زبانوں میں قران فراہم کرنے کے لئے ریاست گیر سطح پر مہم چلائی جائی گی اور لوگو کو بھی جوڑا جائے گا ۔ جس میں محمد کلیم ایڈووکیٹ مجاہد محمد خان مولانا حنیف محمد فرحان ملا محسن علی حنیف یّبی حافظ اسماعیل بیگ اس تحریک میں اہم کردار نبھا رہے ہیں جسمے ٹیم کے ذرے ابٹک پانچ سو لوگوں کو ہندی قرآن بطور ہدیہ دیا جا چکا ہے تحریک میں ابھی جگہ جگہ جاکر قرآن بطور تحفہ دیا جا رہا ہے جن کو عربی نہیں آتی ان کو ہندی قرآن مہیا کرایا جا رہا ہے اس کار خیر میں اور تیزی لانے کے لئے بھوپال شہر میں چار جگہ ایسے کتب خانے بنائے جائیں گے جہاں سے لوگ ہندی قرآن حاصل کر سکیں گے جوتی کی جانب سے بطور توفہ ہوں گے ان جگہوں پہ اس مہم۔ کو آگے بڑھانے کے لئے لوگ یہاں پر ہندی قرآن دے بھی سکیں گے تاکہ زیادہ سے زیادہ لوگوں تک فائدہ پہنچ سکے فی الحال لوگ ٹیم سے رابطہ کر اس کار خیر میں جڑ رہے ہیں