بنگال کی چاروں سیٹوں پر ترنمول کانگریس شاندار جیت کی طرف گامزن

کلکتہ2نومبر: ضمنی انتخابات میں ریاست کے چاروں سیٹ پر ترنمول کانگریس نے سبقت حاصل کرلی ہے، گوسابہ سے ترنمول کانگریس کے امیدوار سبرتو منڈل نے ریکارڈ سبقت حاصل کی ہے۔
کوچ بہار کے دن ہاٹا اسمبلی حلقہ جہاں سے بی جے پی کے ممبر پارلیمنٹ و مرکزی وزیر نشیت پرمانک نے جیت حاصل کی تھی مگر انہو ں نے لوک سبھا کی رکنیت باقی رکھی اوراسمبلی کی رکنیت سے استعفیٰ دیدیا ۔اس کی وجہ سے یہاںضمنی انتخاب ہورہیں۔مگرا ب یہاں سے ترنمول کانگریس کے امیدوار ادیان گوہا نے 129880ووٹوں سے بڑی سبقت حاصل کرلی ہے اور یہ سیٹ بی جے پی کے ہاتھ سے نکلتی جارہی ہے۔ اس وقت بی جے پی امیدوار کو محض 11فیصد ووٹ ملتا ہوا نظر آرہا ہے۔
گوسابا سے ترنمول کانگریس کے امیدوار سبرتو منڈل نے151452 ووٹوں کی سبقت حاصل کرلی ہے۔ بی جے پی کو30ہزار ووٹ ملے ہیں۔یہاں سے ترنمول کانگریس کے فاتح امیدوار جینت نسکر کی کورونا وائرس سے متاثرہونے کے بعد ہوگئی تھی اس کی وجہ سے یہاں ضمنی انتخاب ہورہے ہیں ۔
شانتی پور میں اسمبلی حلقہ جہاں سے بی جے پی نے اسی سال اپریل اور مئی میں ہوئے اسمبلی انتخابات میں جیت حاصل کی تھی میں بھی ترنمول کانگریس کے امیدوار برج گوشوار گوسوامی نے 54 ہزارف سے زاید ووٹوں کی سبقت حاصل کرلی ہے۔یہ سیٹ ہمیشہ سے ترنمول کانگریس کےلئے مشکل رہی ہے ۔برج کشور گوسوامی کو ترنمول کانگریس نے ماسٹر اسٹروک کھیلا تھا۔چوں کہ ان کا خاندان علاقے میں فرقہ وارانہ ہم آہنگی کےلئے مشہور ہے ۔
ترنمول کانگریس نے کہا کہ کوچ بہار سے دن ہاٹا سے ترنمول کانگریس کی سبقت یہ ثابت کرتا ہے کہ شمالی بنگال سے بی جے پی کا زوال شروع ہوگیا ہے۔
کھردہ اسمبلی حلقے سے بھی ریاستی وزیر شوبھندو چٹو پادھیائے امیدوار ہیں اور انہوں نے بھی 50ہزار سے زایدووٹوں سے سبقت حاصل کی ہے۔یہاں اس وقت دوسری پوزیشن پر بی جے پی نہیں سی پی آئی ایم ہے۔