مساوی مواقع کے لئے این ڈی اے میں خواتین کیڈروں کا استقبال: آرمی چیف

پنے، 29اکتوبر: آرمی چیف ایم ایم نرونے نے جمعہ کو کہا کہ نیشنل سیکورٹی اکیڈمی میں خواتین کیڈروں کا استقبال غیرجانبداری اور پیشہ وارانہ جذبہ سے کیاجانا چاہئے جس کے لئے ہندستانی فوج مشہور ہے نیشنل سیکورٹی اکیڈمی کے 141ویں بیچ کی پاسنگ آوٹ پریڈمیں آرمی چیف نے کہاکہ جیسا کہ ہم نے نیشنل سیکورٹی اکیڈمی میں خواتین کیڈروں کے لئے دروازے کھول دیئے ہیں ایسے میں غیرجانبداری اور پیشہ وارانہ جذبہ کے آئندہ بھی جاری رہنے کی امید کرتا ہوں جس کے لے ہندستانی سیکورٹی فورس پوری دنیا میں مشہور ہے۔
آرمی چیف نے کہاکہ فوج کی مہم میں یہ اب بھی اتنا ہی حقیقت ہے جتنا 40سال پہلے تھا۔ انہوں نے کیڈٹ سے تکنیکوں کے بارے میں الرٹ رہنے، اپنے تجسس کوحل کرنے اور اپنی شخصیت کے مطابق شوق کو اپنانے کا مشورہ بھی دیا۔
انہوں نے کہاکہ چیزوں کا تصور کرتے رہئے اور لیک سے ہٹ کر دور کی سوچئے۔ فوج کو میدان جنگ میں ہمیشہ چیلنجز کا سامنا ہوتا رہتا ہے، ہم ناکام نہیں ہوسکتے۔
آرمی چیف نے کہاکہ این ڈی اے قوم کے مسلح دستوں کے لئے قیادت اور مشترکہ صلاحیتوں کو برقرار رکھتا ہے اور یہ احساس ہمارے تینوں اعضا میں موجود ہے۔
مسٹر نرونے نے کہاکہ آج آپ جس جگہ کھڑے ہیں، وہیں 42سال سے کچھ زیادہ وقت پہلے کیڈٹ کے طورپر میں بھی کھڑا تھا۔ میں اس کا جائزہ لے رہا ہوں۔ یہاں سے آپ زیادہ توجہ مرکوز فوجی تربیت کے لئے متعلقہ کیریر سروس اکیڈمیوں میں داخل ہوں گے۔ آپ مختلف لباس میں ہوں گے لیکن ہمیشہ یاد رکھیں کہ کوئی ایک سروس اپنے طورپر جدید جنگ کا مقابلہ نہیں کرسکتی ہے۔
خیال رہے کہ 18اگست کو اپنے ایک عبوری حکم میں سپریم کورٹ نے خوارتین امیدواروں کو نیشنل سیکورٹی اکیڈمی (این ڈی اے) اور بحری اکادمی کے داخلہ امتحانات میں بیٹھنے کی اجازت دی تھی تاکہ وہ بھی دفاعی خدمات میں کمیشن حاصل کرسکیں۔