ناظرین کے دلوں پر راج کرنے والا ’بالی ووڈ کا شاہجہاں‘: پردیپ کمار

27 اکتوبر برسی کے موقع پر
ممبئی، 26 اکتوبر: ہندی اور بنگالی فلموں کے مشہور اداکار پردیپ کمار کو ایک ایسے اداکار کے طور پر یاد کیا جاتا ہے جنہوں نے 1950 اور 60 کی دہائی میں اپنے تاریخی کرداروں کے ذریعہ ناظرین کو محظوظ کیا۔

اس زمانے میں فلم سازوں کو اپنی فلموں کے لئے جب بھی کسی بادشاہ ، شہنشاہ، پرنس یا نواب کے کردار کی ضرورت ہوتی تھی تو وہ پردیپ کمار کو یاد کیا کرتے تھے۔
ان کی دلکش اداکاری سے آراستہ فلم انارکلی، تاج محل، بہو بیگم اور چترلیكھا جیسی بے شمار فلموں کو ناظرین آج بھی نہیں بھولے ہیں۔

مغربی بنگال میں 4 جنوری، 1925 کو ایک برہمن خاندان میں شیتل بٹاولی عرف پردیپ کمار کی پیدائش ہوئی۔
وہ بچپن سے ہی فلموں میں اداکاری کرنے کا خواب دیکھا کرتے تھے۔

اپنے اسی خواب کو پورا کرنے کے لئے زندگی کے ابتدائی دور میں وہ تھیئٹر سے وابستہ ہوگئے۔
حالانکہ اس بات کے لئے ان کے والد راضی نہیں تھے۔

سال 1947 میں پردیپ کمار کی ملاقات ڈائریکٹر دیوكي بوس سے ہوئی اور جنہوں نے اپنی بنگلہ فلم ’’الكھنندا‘‘ میں کام کرنے کا موقع دیا۔

فلم الکھنندا کے ذریعے پردیپ کمار اداکار کے طور پر میں شناخت بنانے میں بھلے ہی کامیاب نہیں ہوسکے، لیکن یہاں سے ان کے فلمی کیریئر کا آغاز ضرور ہوگیا۔