بی جے پی کی حکومت بنائے رکھنے کےلئے سلاوٹ کو جتانا ضروری:کیلاش وجئے ورگیہ


بھوپال / اندور 8 جولائی(نیانظریہ بیورو)بی جے پی کے قومی جنرل سکریٹری کیلاش وجیورگیہ نے کانگریس چھوڑ کر بی جے پی میں آئے رہنماو¿ں کے ساتھ کام کرنے کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ کئی بار تلخ گھونٹ پی کر بھی سماج کی خدمت کرنی ہوتی ہے، اسی کو سیاست کہتے ہیں. بی جے پی کی طرف سے مدھیہ پردیش میں آئندہ وقت میں ہونے والے 24 اسمبلی حلقوں کے ضمنی انتخابات کے لئے اسمبلی علاقہ کی ورچول ریلیاں منعقد کی جا رہی ہے. اسی سلسلے میں بدھ کو اندور کے سانوےر اسمبلی حلقہ کی ریلی ہوئی. اس میں وزیر اعلی شیوراج سنگھ چوہان نے بھوپال سے خطاب کیا وہیں قومی جنرل سکریٹری کیلاش وجیورگیہ اندور سے شامل ہوئے۔ اس ورچول ریلی سے خطاب کرتے ہوئے وجیورگیہ نے کہا،بہت سے کارکنوں اور میرے جیسے کارکن کے بھی ذہن میں کبھی کبھی یہ خیال آتا ہے کہ جن کانگریس کے لوگوں کے ساتھ ہم لڑتے رہے ان کے لئے ہم کیسے کام کریں گے. دوستو، سیاست اسی کو کہتے ہیںکہ کبھی کبھی کڑوا گھونٹ پی کر بھی معاشرے کی خدمت کرنی ہوتی ہے. میں جانتا ہوں، سانوےر کے کارکنوں سے ملا، انہوں نے کہا کہ ہم کیسے کانگریس کا کام کریں گے. یہ کانگریس کا کام نہیں ہے کیونکہ تلسی رام سلاوٹ نے بی جے پی کی رکنیت حاصل کر لی ہے. ” اپنی بات کو آگے بڑھاتے ہوئے وجیورگیہ نے کہا، “بی جے پی میں سلاوٹ صرف اکیلے نہیں آئے ہیں اپنے ساتھ اراکین اسمبلی کی فوج لے کر آئے ہیں. اس فوج کی وجہ سے شیوراج سنگھ چوہان آج وزیر اعلی ہیں. شیوراج سنگھ مسلسل وزیر اعلی بنے رہیں اس کے لئے بہت ضروری ہے کہ یہ سیٹ ہم جیتےں. ” واضح رہے کہ سابق مرکزی وزیر جیوتی رادتیہ سندھیا کے ساتھ اس وقت کے 22 ممبران اسمبلی نے کانگریس چھوڑ کراسمبلی کی رکنیت سے بھی استعفیٰ دے دیا تھا. اسی کی وجہ سے ان علاقوں میں ضمنی انتخابات ہو رہے ہیں. ان میں سے ایک ہے اندور کی سانوےر سیٹ، جہاں سے سلاوٹ امیدوار ہیں. سلاوٹ کی گنتی سندھیا کے قریبی لوگوں میں ہوتی ہے۔