کابینہ توسیع آج: لمبی جدوجہد کے بعد شیوراج حکومت کی کابینہ توسیع ہوئی ممکن


بھوپال:یکم جولائی(نیانظریہ بیورو)
چوتھی مرتبہ وزیراعلیٰ بنے شیوراج سنگھ چوہان اپنی کابینہ میں توسیع کرنے جارہے ہیں۔کئی دنوں تک غوروخوض کے بعد جمعرات کو نئے وزراءحلف لیںگے۔ وزیراعلیٰ شیوراج اور دہلی میں بیٹھے لیڈران کے درمیان کئی میٹنگیں ہوئیں۔ حالانکہ باربار کابینہ توسیع ٹلنے سے پارٹی میں پھوٹ پیدا ہونا شروع ہوگئی تھی۔مانا جارہا ہے کہ کئی طرح کی قواعد کے بعد بھی متعینہ وقت پر کابینہ توسیع نہیں ہوپائی، کیوںکہ کچھ ناموں کو لے کر اتفاق نہیں بن پارہا تھا۔ اس کے ساتھ ہی خبریہ بھی آرہی ہے کہ کئی سابق وزراءکو اس مرتبہ کابینہ میں شامل نہیں کیا جائے گا۔ وہیں کئی نئے چہرے شیوراج کابینہ میں وزیر بنیںگے۔ ذرائع کے مطابق جیوتی رادتیہ سندھیا خیمے سے کچھ مزید نام جڑسکتے ہیں۔ کابینہ توسیع کے سلسلہ میں خبر یہ بھی آرہی ہے کہ 3سے 4سابق وزراءکو کابینہ میں جگہ نہیں ملے گی۔ اس فہرست میں سابق وزیر گوری شنکر بسین،رام پال سنگھ،راجیندر شکلا، وجے شاہ،پارس جین کے نام شامل ہیں۔نئے چہروں کو موقع دینے کے لئے پرانے وزراءکو ڈراپ کیا جارہا ہے۔ بالاگھاٹ سے رام کشور کانورے کو وزیربنایا جاسکتا ہے۔ اس کے ساتھ ہی سابق وزیر گوپال بھارگو،وشواس سارنگ،بھوپیندر سنگھ، اروند بھدوریااور موہان یادو کو کابینہ میں جگہ مل سکتی ہے۔
شیوراج کابینہ میں سندھیا کا دبدبہ:شیوراج کابینہ میں جیوتی رادتیہ سندھیا کا بڑا دبدبہ رہنے والا ہے۔ دووزیر پہلے ہی بنائے جاچکے ہیں۔ اس کے ساتھ ہی اب خبر آرہی ہے کہ سندھیا خیمے سے 12وزیر بنائے جاسکتے ہیں۔ پہلے قیاس یہ لگایا جارہا تھا کہ شیوراج کابینہ میں کم سے کم 9 سے 10سندھیا حامیوں کو وزیر بنایا جائے گا۔ لیکن اب اس میں مزید نام جڑنے کی خبر مل رہی ہے۔ حالانکہ اس کے لئے بی جے پی کو اپنے کئی سینئر لیڈران کو نظرانداز کرنا ہوگا۔ جو کہ بی جے پی کے لئے ایک جوخم بھرا قدم ہوسکتا ہے۔ سابقہ کی کمل ناتھ کابینہ میں بھی جیوتی رادتیہ سندھیا کے 6لوگ شامل تھے۔شیوراج کابینہ میں سندھیا خیمے کے 2لوگ تلسی سلاوٹ اور گووند سنگھ راجپوت پہلے سے ہی کابینہ میں شامل ہیں۔باقی لیڈران کو بھی وزیر بنایا جاسکتا ہے۔ جس میں امرتی دیوی ،پردیمن سنگھ تومر،مہیندرسنگھ سسودیا اور پربھورام چودھری کے نام طے ہےں ،کیونکہ یہ لوگ کابینہ وزیر کا عہدہ چھوڑ کر بی جے پی میں آئے ہیں۔ اس کے علاوہ سندھیا حامیوں میں بساہولال سنگھ،ہردیپ سنگھ ڈنگ،ایندل سنگھ کنسانا،راج وردھن سنگھ اور رنویر جاٹو بھی کابینہ وزیر کے اہم دعویدار مانے جارہے ہیں۔ اس کے علاوہ بھی کچھ چونکانے والے نام سامنے آسکتے ہیں۔