سندھیا کے مطالبے کی وجہ سے پھر ٹلی کابینہ توسیع


بھوپال:30جون (نیانظریہ بیورو)
مدھیہ پردیش میں کابینہ توسیع کو لے کر کافی گھماسان چل رہا ہے ۔ مسلسل کابینہ توسیع کو لے کر قیاس لگائے جارہے ہےں۔ حالانکہ کابینہ توسیع ابھی کچھ دن اور ٹل سکتی ہے۔ بتایا جارہا ہے کہ جیوتی رادتیہ سندھیا اپنے 10ایم ایل ایز کو وزیر بنانے کا مطالبہ کررہے ہیں۔ اور اسی کو لے کر بہت جلد سندھیا امت شاہ سے بھی ملاقات کریںگے۔ غورطلب ہے کہ کابینہ توسیع کو لے کر مسلسل نئی نئی تاریخیں سامنے آرہی ہیں۔ لیکن کابینہ توسیع فی الحال کچھ دن مزید ٹل سکتی ہےں۔ کیونکہ جیوتی رادتیہ سندھیا اپنے 10حامیوں کو وزیر بنانے کے مطالبہ کو لے کر امت شاہ سے ملاقات کریںگے۔ جس کی وجہ سے ریاست میں کابینہ توسیع مسلسل ٹلتی جارہی ہے۔ ایسا مانا جارہا ہے کہ دہلی میں ہوئے غوروخوض کے بعد بی جے پی کے سینئر اور تجربہ کار لیڈران کے ناموں پر منظوری نہیں مل پائی ہے۔ امکا ن یہ بھی ظاہر کیا جارہا ہے کہ نئے چہروں کو کابینہ میں جگہ مل سکتی ہے۔ دراصل دہلی میں ہوئے غوروخوض کے بعد وزیراعلیٰ شیوراج سنگھ چوہان، ریاستی صدر وی ڈی شرما اور پارٹی انچارج سہاس بھگت بھوپال پہنچے۔ جس کے بعد منگل کو بی جے پی دفتر میں میٹنگوں کا سلسلہ جاری رہا ،لیکن اس دوران وزیراعلیٰ نے یہ ضرور واضح کردیا کہ بدھ کو کابینہ توسیع نہیں ہوگی۔ وہیں ریاست کے وزیرداخلہ نروتم مشرا اب تک دہلی سے نہیں لوٹے ہیں۔ ان کے لوٹنے کے بعد اور جیوتی رادتیہ سندھیا کی امت شاہ سے ملاقات کے بعد ہی ریاست کی کابینہ توسیع ہونے کا امکان ظاہر کیا جارہا ہے۔