وباءکے دوران ڈیوٹی پر نہیں آنے والے ڈاکٹرس کو دیا 10دن کا الٹی میٹم


بھوپال:21جون (نیانظریہ بیورو)
مدھیہ پردیش کے بیشتر اضلاع اس وقت کورونا سے متاثر ہے اور اس سے نمٹنے کے لئے ڈاکٹرس اور انتظامیہ نے پوری طاقت لگادی ہے۔ وہیں ریاست کے تقریباً 173ڈاکٹرس ڈیوٹی پر نہیں پہنچ رہے ہیں۔ یہ حالت اس وقت سے ہے ، جب ریاستی حکومت 8اپریل سے ایسما(ضروری خدماتی تحفظ ایکٹ)لگاچکی ہے۔ باربار ہدایات جاری کرنے کے باوجود ڈیوٹی پر نہیں آرہے ان 173ڈاکٹروں کو 10دن کا الٹیم میٹم دیاگیا ہے۔ اس بعد ڈیوٹی سے غائب ڈاکٹروں کے خلاف ایک طرفہ کارروائی کی جائے گی۔ دراصل ریاست میں کورونا وباءپھیلنے کے بعد ریاستی حکومت نے 8اپریل سے ایسما لگاتے ہوئے تمام سرکاری ادروں میں تعینات ڈاکٹروں کی خدمات بے حدضروری خدمات اعلان کردیا گیا تھا۔ ایسے حالات میں ڈاکٹرس ڈیوٹی نہیں چھوڑ سکتے ہیں۔ اس کے بعد بھی ریاست کے مختلف اضلاع میں تعینات 173ڈاکٹرس ڈیوٹی پر نہیں پہنچ رہے ہیں۔ اس میں منڈلاکے 12،چھندواڑہ کے 5،دتیا کے 5،ٹیکم گڑھ کے 6،اندور کے 2اجین کے 7ڈاکٹرس شامل ہیں۔ محکمہ صحت کے کمشنر فیض احمد قدوئی نے ڈیوٹی سے غائب ان ڈاکٹروں اور ماہرین کو 10دنوں کا الٹی میٹم دیا ہے۔ تمام طرح کی معلومات کے ساتھ ان سبھی کو ہدایت دی گئی ہے کہ 10دن کے اندر سبھی متعلقہ اضلاع کے اسپتال اور صحت افسران کے پاس اپنی موجودگی درج کرائیں، یا اس ضمن میں اپنی معلومات دیں۔ اس ضمن میں خبر نہیں دینے پر یہ مانا جائے گا کہ ڈاکٹر سرکاری کام کرنے کے خواہش مند نہیں ہیں،ایسا مان کر ان کے خلاف ایک طرفہ کارروائی کر انہیں معطل کردیا جائے گا۔