مودی سے سوال کرنے والوں کو پرگیہ ٹھاکر نے قراردیا غدار


بھوپال:21جون (نیانظریہ بیورو)
ہمیشہ اپنے بیانوں سے سرخیوں میں رہنے والی سادھوری پرگیہ سنگھ ٹھاکر نے ایک مرتبہ پھر سے کچھ ایسا کہہ دیا جس سے وہ سرخیوں میں آگئی ہےں۔ بیماری سے صحت یاب ہونے کے بعد واپس بھوپال لوٹی ممبرپارلیمنٹ پرگیہ ٹھاکر لاک ڈاﺅن کے بعد پہلی مرتبہ لوگوں کے درمیان پہنچی۔ جہاں انہوں نے مودی 2اقتدار کی کامیابیوں کے کارڈ لوگوں میں بانٹے۔اسی سلسلے میں میڈیا کے سوال پر انہوں نے جواب دیتے ہوئے واضح طور پر کہا کہ اس وباءکے دور میں جو بھی وزیراعظم مودی پر سوال اٹھائے گا وہ ”دیش دروہی“ ہی ہوگا ۔دراصل دہلی سے اپنا علاج کراکر واپس بھوپال لوٹی ممبرپارلیمنٹ پرگیہ سنگھ نے خود کفیل ہندوستان مہم کے تحت لوگوں کو مودی 2کے ایک سال کی مدت کی کامیابیوں کی فہرست کارڈ سونپی۔ وہیں انہوں نے لوگوں سے چائنا کے سامان استعمال نہ کرنے کی اپیل کی۔ سادھوپرگیہ سنگھ نے کہا کہ جو بھی محب وطن ہیں،وہ چائنا کے سامان کا استعمال نہ کریں۔ ساتھ ہی ہند-چین کے درمیان چل رہے تنازعہ کے بارے سوال کرنے پر پرگیہ نے کہا کہ پورا ملک کندھے سے کندھا ملا کر لڑنے کو تیار ہے۔ جس میں چائنا کو 1انچ بھی زمین نہیں دی جائے گی۔ پرگیہ نے کانگریس اور راہل گاندھی پر نشانہ سادھتے ہوئے کہا کہ کانگریس کی ذہنیت رکھنے والے لوگ”دیش دروہی“ہیں۔ ایسے لوگوں کو ملک کے بارے میں پہلے سوچنا چاہئے۔ اس کے ساتھ ہی انہوں نے کہا کہ رنجش کے وقت میں وزیراعظم مودی پر سوال کھڑے کرنے والے لوگ ملک کے غدار ہی ہیں۔ واضح رہے کہ بھوپال ممبرپارلیمنٹ پرگیہ ٹھاکر نے کورونا وباءکے دوران اپنے غائب رہنے پر صفائی پیش کی۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعظم مودی نے وہیپ جاری کیا تھا جس کے تحت وہ دہلی میں تھیں۔ اس کے علاوہ جب وہ بھوپال آنا چاہتی تھیں تب فلائٹ بند کردی گئی تھی۔ اورآنے کا انتظام نہیں تھا۔ جس کی وجہ سے وہ بھوپال نہیں آسکی، لیکن اپنے ہیلپ لائن کے ذریعہ وہ تمام ضرورت مندوں کی مدد کرتی رہی ۔پھر بھی کانگریس نے ان کی غیرموجودگی کو لے کر سیاست کی جو غلط ہے۔ واضح رہے کہ کورونا وباءکے دوران کانگریس مسلسل پرگیہ ٹھاکر کے غائب ہونے پر سوال اٹھاتی رہی ہے۔