ریاست میں کورونا مریضوں کی تعداد 11ہزار سے ہوئی زیادہ


بھوپال:19جون(نیانظریہ بیورو)
تین مہینے سے زائد وقت گذرچکا ہے لیکن کورونا کا قہر مسلسل جاری ہے ۔ملک میں کورونا مثبت مریضوں کی تعداد تقریباً4لاک پہنچ گئی ہے۔ مسلسل بڑھتی تعداد کے حساب سے ہندوستان نے بریٹین کو پیچھے چھوڑ دیا ہے اور دنیا کا چوتھا سب سے زیادہ متاثر ملک بن گیا ہے۔ اسی سلسلے میں مدھیہ پردیش میں بھی کورونا مثبت مریضوں کی تعداد 11ہزار سے تجاوز کرگئی ہے۔ وہیں اب تک 484لوگوں کی کورونا سے موت بھی ہوگئی ہے۔ خاص طورپر اندور-بھوپال میں مسلسل مثبت مریضوں کے ملنے کا سلسلہ جاری ہے۔ جمعرات کو جہاں بھوپال میں 62کورونا مثبت مریض ملے تھے اب اندور میں 55لوگوں کی رپورٹ مثبت آئی ہے۔ گذشتہ 24گھنٹوں میں 182نئے معاملے سامنے آئے ہیں۔ اندور شہر کی بات کرےں تو یہاں اب تک کی رپورٹ کے مطابق شہر میں 55نئے معاملے سامنے آ چکے ہیں۔ جس میں کورونا سے ہلاک ہونے والوں کی تعداد اب189ہوگئی ہے۔اور آج چار لوگوں کی کورونا سے موت کی تصدیق کی گئی ہے۔ مسلسل تین دنوں میں 4-4لوگوں نے زندگی ہاری ہے۔ وہیں بھوپال میں بھی حالات بے قابو ہوتے جارہے ہیں۔ آئے دن 50-70کورونا مریض مل رہے ہیں۔ اسی کے ساتھ بھوپال شہر میں مثبت مریضوں کی تعداد 2300سے تجاوز کرگئی ہے۔ جس میں سے تقریباً75لوگوں کی موت ہوچکی ہے۔مسلسل بڑھ رہے معاملوں نے حکومت اور انتظامیہ کی فکرمیں مزید اضافہ کردیا ہے۔ حالانکہ ریکوری ریٹ میں سدھار ہوا ہے، لیکن تعداد میں بھی تیزی آرہی ہے۔ اسی کی وجہ سے بھوپال کلکٹر ترون پتھوڑے کا تبادلہ کردیا گیا ،انی واش لاوانیا کو بھوپال کی ذمہ داری دی گئی ہے۔ لاوانیا کے سامنے کورونا کنٹرول کا بڑا چیلنج ہے۔ جبکہ اندور میں تو کلکٹر پہلے ہی بدلے جاچکے ہیں۔ حکومت کے سامنے یہ دونوں شہر چیلنج بنے ہوئے ہیں۔ آنے والے دنوں میں اعدادوشمار میں مزید اضافہ ہونے کا امکان ہے۔ حالانکہ بھوپال سے زیادہ اندور میں سختی برتی جارہی ہے۔ بھوپال -اندور ہی نہیں ریاست کے دیگر اضلاع میں بھی حالات بے قابو ہوتے جارہے ہیں۔