84دنوں کے بعد بھوپال میں مذہبی مقامات میں ہوئی اجتمائی عبادت


بھوپال:15جون (نیانظریہ بیورو)
راجدھانی میں مذہبی مقامات کھلنے کے بعد مسجدوں میں نماز ادا کی گئی۔ سوشل ڈسٹینسنگ پر عمل کرتے ہوئے مسلم برادری کے لوگوں نے نماز ادا کی۔ اس کے علاوہ مسجدوں میں سینیٹائزر اور ماسک کی بھی ضروری انتظامات کئے گئے ہیں۔ واضح رہے کہ راجدھانی بھوپال کی موتی مسجد اور دوسری دیگر مساجد میں سوشل ڈسٹینسنگ پر عمل کرتے ہوئے بروز پیر تقریباً 84دنوں کے بعد مسلم برادریوں کے لوگوں نے نماز ادا کی ۔ اس دوران کوروناوباءسے بچنے کے لئے مساجد میں ضروری انتظامات کا بھی خیال رکھا گیا ۔ مسجد کے مین گیٹ پر سینیٹائزر اور ہاتھ دھونے کے لئے پانی اور صابن کا انتظام کیا گیا ہے۔ ساتھ ہی پوسٹر بھی لگائے گئے ہیں کہ ہاتھ دھوکر ہی مسجد میں داخل ہوں۔وہیں احتیاط کے طور پر مسجد وں کے اندر بنے پانی حوض کو بھی خالی کردیئے گئے ہیں۔ اس کے علاوہ مسجدوں میں نماز ادا کرنے کے لئے جانماز بھی ہٹادی گئی ہے۔ دوری بنائے رکھنے کے لئے مسجد کی فرش پر مارکنگ کی گئی ہے ۔ مسجد میںنماز ادا کرنے آئے نمازیوں نے بھی مسجد میں کئے گئے انتظامات کی تعریف کی اور قوانین پر عمل کرتے ہوئے نماز ادا کی۔
مسجد کے اندر ان باتوں کا رکھےں خیال:وضو گھر سے ہی کرکے آئیں۔چپل اپنے گاڑی میں رکھیں۔ ایک دوسرے سے دوری بناکر فرش پر ہی نماز ادا کریں۔ چادر نہیں چڑھائیں۔ بھیڑ سے بچیں۔ مسجد کے اندر کسی سے ہاتھ یا گلے نہ ملیں۔