کوروناکا قہر : پروفیسر سنجے جین کی کورونا سے ہوئی مو ت


اندور12جون(نیا نظریہ بیورو) جمعرات کو گورنمنٹ اٹل بہاری واجپائی آرٹس اینڈ کامرس کالج (جی ایس سی سی) کے سینئر پروفیسر ڈاکٹر سنجے جین کورونا کے سبب انتقال کر گئے ۔ 30 مئی کو ان کی رپورٹ مثبت آنے کے بعد ہی انہیں چوئتھ رام اسپتال میں بھرتی کرایا گیا تھا۔ سوداما نگر ساکن، ڈاکٹر جین کچھ دنوں قبل اپنے بھائی سے ملنے گئے تھے ، جو حال ہی میں کینسر کا علاج کرانے کے بعد ممبئی سے واپس آئے تھے ۔ بھائی اور ان کے کنبہ کے افراد کچھ دنوں کے بعد مثبت ہوئے تو کچھ دن بعد ان کی بھی طبیعت خراب ہوگئی۔ جب ان کا کورونا ٹسٹ کیا گیا تو وہ بھی مثبت پائے گئے۔ ان کی اہلیہ کو بھی کورونا کا مرض لاحق ہوگیا تھا ، حالانکہ وہ صحت یاب ہوکر گھر لوٹ چکی ہیں ۔ ڈاکٹر جین اسپتال میں اپنی رکی ہوئی تنخواہ سے بہت پریشان تھے۔ جب ایڈیشنل ڈائریکٹر ہائر ایجوکیشن( اے ڈی )، ڈاکٹر سریش سلاوٹ نے صورتحال جاننے کے لئے فون کیا تو ، ڈاکٹر جین نے کہا ، سر ، میں بہت پریشان ہوں چھ ماہ سے میری تنخواہ نہیں ملی ہے۔ کیا آپ دلوا دیں گے ؟ اس پر سلاوٹ نے بھوپا ل میں افسروں سے
بات کی اور اگلے ہی دن
4 جون کو ان کی مکمل تنخواہ ان کے اکاﺅنٹ میں ٹرانسفر کردی گئی۔ سلاوٹ کا کہنا ہے ، کہ انہوں نے یہ پیغام شکریہ ادا کرنے کے لئے بھیجا ،یہ پیغام آخری پیغام ثابت ہوا ۔ کالج کے ساتھی پروفیسر انوپ ویاس نے کہا کہ وہ تھیٹر کے ایک بہترین فنکار تھے۔ 100 سے ز یادہ ڈراموں میں انہوں نے اپنے فن کا مظاہرہ کیا تھا ۔