کورونا نے ریاستی ملازمین کو کیامتاثر!


حکومت نے ملازمین کے مہنگائی بھتے کے اضافے پر لگائی اگلے حکم تک روک
بھوپال:3اپریل(نیانظریہ بیورو) مدھیہ پردیش حکومت اس وقت مالی بحران سے گذر رہی ہے ،اس پر کورونا وائرس کی مار کابھی شکار ہے۔ اس کے پیش نظر ، ریاستی حکومت نے ریاست کے ملازمین کو مجوزہ مہنگائی الاو¿نس اپریل ماہ سے ملتوی کردیا ہے۔ حکومت نے اس ضمن میں احکامات جاری کردیئے ہیں۔ اب اگلے حکم تک الاو¿نس روک دیاجائیگا،کورونابحران سے نمٹنے کے بعد حکومت ملازمین کی مہنگائی الاو¿نس پربعد میں فیصلہ کرے گی۔واضح رہے کہ بھوپال کمل ناتھ حکومت کے آخری کابینہ اجلاس میں ملازمین کے مہنگائی الاو¿نس میں اضافے کا فیصلہ کیا گیاتھا۔ اس میں سرکاری ملازمین اور مستقل کارکنوں کے مہنگائی الاو¿نس میں یکم جولائی 2019 سے چھٹے اور ساتویں اسکل تنخواہ پیمانے میں مہنگائی الاو¿نس کی شرح 17 فیصد رکھی گئی تھی۔ ریاست میں کورونا وائرس کے بڑھتے ہوئے انفیکشن کے پیش نظر شیو راج حکومت نے اسے فی الحال روک دیا ہے۔وہیںمارچ 2020 کی تنخواہ سے مہنگائی الاو¿نس کی نقد ادائیگی کے لئے ہدایات دی گئیں۔ دوسری طرف ، ملازم تنظیمیں فی الحال حکومت کے اس اقدام کے بارے میں کچھ بھی بولنے سے انکار کر رہے ہیں۔ وہیںملازمین تنظیم کے عہدیداروں کے مطابق ، پہلے اس حکم کی وجہ معلوم ہوجائے کہ اس حکم کے پیچھے حکومت کا کیا ارادہ ہے۔ اس کے بعد ہی آئندہ کی حکمت عملی بن سکے گی۔فی الحال اس وقت اس بارے میں کچھ کہنا جلدبازی ہوگی۔اس لئے پورے حقائق جاننے کے بعد ہی ملازمین یونین کسی نتیجے پرپہنچے گی۔اس کے بعد ہی کوئی ٹھوس اقدامات کئے جائیں گے۔