بھوپال کے قریب موجود ایک رسورٹ شراب خوری کا بنا اڈہ


بھوپال:11جون(نیانظریہ بیورو)
لاک ڈاﺅن کے دو مہینے سے زائد ہوچکے ہیں لوگوں کو سکون دینے کی ذمہ داری ایک رسورٹ نے اٹھائی ہے۔ راجدھانی کے قریب اس رسورٹ میں حکومت کے بنائے نظم وضبط کی خوب دھجیاں اڑائی جارہی ہےں۔ جہاں اس رسورٹ میں بغیر بار لائسنس کے کھل کر شراب خوری کی جارہی ہے، وہیں یہاں پر موجود کمروں میں عیاشی کی کھلی چھوٹ دیدی گئی ہے۔ ذرائع کے مطابق راجدھانی کے نزدیک اومنی ویلی رسورٹ میںایک باربنایا ہوا ہے۔ جس میں راجدھانی اور اس کے اطراف کے سیاسی ، کاروباری،اسٹوڈینٹس اور شوقین لوگ یہاں پہنچتے ہیں۔غورطلب ہے کہ برسوں سے چل رہے اس کاروبار کو چلارہے رسورٹ مالک منیش جوشی خود کو حکومت اور سیاستدانوں کے قریبی بتائے جاتے ہیں۔ سرکاری افسران کو رشوت بھی انہوں نے پہنچائی ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ حکومتوں اور سرکاری دفاتر میں بیٹھے لوگ ان کے رسورٹ میں شراب پینے اور عیاشی کرنے آتے ہیں، اس لئے انہیں کسی لائسنس کی ضرورت نہیں ہے۔
عیاشی کا ٹھکانہ بنا اومنی رسورٹ:
اومنی رسورٹ راجدھانی واقع ہونے کی وجہ سے عاشق جوڑے اور عیاشی کرنے والوں کے لئے محفوظ ٹھکانہ ہے۔ یہاں آنے اور عیاشی کے لئے یہ رسورٹ گارنٹی مہیا کراتا ہے۔ لاک ڈاﺅن کی وجہ سے جہاں لوگ شراب خوری کے لئے ترس گئے تھے۔ ہوٹل ، ریسٹورینٹ ،شراب کے ان لاک ہونے کے ساتھ ہی لوگ مستی کی تلاش میں نکل پڑے ہیں۔ ایسے میں اومنی ویلی رسورٹ میں جہاں صبح سے لے کر رات تک شرابیوں کی بھیڑ لگنے لگی ہے۔ اور عیاشی کرنے والوں سے یہاں کے روم بھرے ہوئے ہیں۔ کمائی میں لگے رسورٹ مالک منیش جوشی اس موقع کو دو مہینے کے نقصان کی بھرپائی کے طور پراستعمال کررہے ہیں۔
باکس:
ان لاک میں بلایا جارہا ہے دعوت دیکر :
ذرائع کے مطابق شراب شوقین اور عیاشی کرنے والے اومنی ویلی رسورٹ کے مقامی صارفین ہیں۔ رسورٹ کی خفیہ دستاویز میں موجود صارفین کے نام اور پتے ان لاک ہونے کے بعد کھنگالے جارہے ہیں۔ ان صارفین کو رسورٹ کے ملازمین فون کرکے خدمت کا موقع دینے کی گذارش کررہے ہیں۔ ٹیلی فون کے ذریعہ دعوت میں شراب نوشی اور عیاشی کے شوقینوں کو طرح طرح کا لالچ اور موجود نئی سہولیات کا ذکر بھی کیا جارہا ہے۔