بی جے پی کی حکومت بننے کے بعد ریاست میں بڑھے جرائم :کانگریس


بھوپال:10جون(نیانظریہ بیوو)
مدھیہ پردیش کانگریس نے بی جے پی حکومت پر نشانہ سادھتے ہوئے الزام لگایا ہے کہ بی جے پی کے اقتدار میں آنے بعد ریاست میں جرائم بڑھ گئے ہیں۔ کانگریس ترجمان امت دوبے کا کہنا ہے کہ اپریل مہینے میں ریاست میں 26ہزار 515معاملے درج کئے گئے ہیں ۔ جبکہ مارچ مہینے میں یہ اعدادوشمار 20ہزار870تھے۔ انہوں نے بی جے پی پرالزام لگایا کہ ریاست میں بی جے پی حکومت اقتدار میں آتے ہی ایک مرتبہ پھر جرائم بڑھنے لگے ہیں۔ دراصل کانگریس نے الزام لگایا ہے کہ لاک ڈاﺅن کے دوران اپریل مہینے میں 246اغوا،119قتل،130قتل کی کوشش ،206عصمت دری،362خواتین کے ساتھ بدسلوکی کے معاملات ہوئے ہیں۔ سب سے زیادہ عصمت دری کے معاملات بھوپال اور ہوشنگ آباد میںسامنے آئے ہیں۔ وہیں سب سے زیادہ یرغمال ساگر اور ریوا میں ہوئے ہیں۔ اس کے ساتھ ہی کانگریس نے الزام لگاتے ہوئے کہا کہ بی جے پی حکومت کی پچھلے 15سالوں کے دوران یرغمال اور عصمت دری سمیت تمام طرح کے جرائم میں اضافہ ہوا ہے۔ وہیں گیہوں کی ریکارڈ خریدی کو لے کر انہوں نے کہا کہ کمل ناتھ حکومت کی پالیسیوں کا ہی نتیجہ ہے کہ ایم پی بہتر فصل ہوئی ہےں، لیکن اب بی جے پی کانگریس کی لگائی فصل کو کاٹنے کا کریڈٹ لے رہی ہے۔