راجیہ سبھا انتخابات: 19جون کوبی ایس پی ،ایس پی اور آزاد ایم ایل ایزکریں گے دوسری سیٹ کا فیصلہ


بھوپال:9جون (نیانظریہ بیورو)
19جون کو ہونے والے راجیہ سبھا انتخابات کو لے کر مدھیہ پردیش کی سیاست میں سرگرمی تیز ہوگئی ہیں۔ خاص کر راجیہ سبھا کی دوسری سیٹ کو لے کر تذبذب اب بھی برقرار ہے ، کیوں کہ ایس پی، بی ایس پی اور آزاد ایم ایل ایز نے ابھی تک کوئی فیصلہ نہیں لیا ہے۔ وہیں کانگریس لیڈران نے آزاد ، ایس پی اور بی ایس پی ایم ایل اےز سے رابطہ کرنا شروع کردیا ہے۔ کہا جارہا ہے کہ راجیہ سبھا انتخابات میں بی جے پی کو جھٹکا لگ سکتا ہے۔ اس بات کا اشارہ خود ایم ایل ایز نے دیاہے۔ دراصل ایس پی ،بی ایس پی ایم ایل ایز راجیش شکلا (ببلو)اور سنجیو کشواہا کا راجیہ سبھا انتخابات کو لے کر بڑابیان سامنے آیا ہے ۔ ایم ایل اےز کا کہنا ہے کہ پارٹی ہائی کمان جو طے کرے گا اس کو ووٹ دیا جائے گا۔ فلور پر علاقے کی ترقی کے لئے بی جے پی کو حمایت دی تھی۔ نئی حکومت سے امید ہے کہ گذشتہ حکومت میں جن کاموں کو منظورکیاتھا ان کوجلد شروع کرایا جائے گا۔ راجیہ سبھا انتخابات کو لے کر ابھی کوئی فیصلہ نہیں لیا گیا ہے۔ بی ایس پی اور ایس پی نے راجیہ سبھا انتخابات کو لے کر کہا کہ بی جے پی سے کوئی گفتگو نہیں ہوئی ہے۔ بی جے پی کی طرف سے ابھی تک کسی نے رابطہ بھی نہیں کیا ہے۔ راجیہ سبھا انتخابات میں کسے ووٹ کریں گے یہ پارٹی اعلیٰ کمان سے گفتگو کے بعدطے ہوگا۔ ریاست میں کابینہ توسیع میں ہورہی دیری پر ببلو شکلا نے کہا کہ میں سمجھتاہوں پہلی مرتبہ کابینہ توسیع میں اتنی دیری ہوئی ہے۔
وہیں خبر یہ بھی آرہی ہے کہ راجیہ سبھا انتخابات کو لے کر کانگریس کے سینئر لیڈربی ایس پی ایم ایل اے کے رابطے میں ہیں ۔ کانگریس کے راجیہ سبھا امیدواردگوجے سنگھ نے بی ایس پی ایم ایل اے سنجیو کشواہا سے رابطہ کیا۔ کانگریس پوری کوشش کررہی ہے کہ دوسری سیٹ پر بھی قبضہ ہوسکے ۔ بی جے پی بھی اپنی حکمت عملی کے تحت کام کررہی ہے۔ بی جے پی ریاستی صدر وی ڈی شرما دعویٰ کرچکے ہیں کہ بی ایس پی، ایس پی اور چاروں آزاد ایم ایل ایز ان کے ساتھ ہیں اور وہ ہر حال میں دو سیٹوں پر جیت حاصل کریںگے۔ حکومت کی حمایت کے ساتھ راجیہ سبھا انتخابات میں بھی بی ایس پی ،ایس پی اور آزاد ایم ایل ایز بی جے پی کی حمایت کریںگے۔
غورطلب ہے کہ لاک ڈاﺅن کی وجہ سے ریاست کی تین راجیہ سبھا سیٹوں پر انتخابات رکے ہوئے تھے۔جو اب 19جون کو ہونا ہے۔ دگوجئے سنگھ ، پربھات جھا اور ستیہ نارائن جٹیا کی مدت 9اپریل کو مکمل ہوجانے کے بعد سے تینوں سیٹ خالی ہیں۔ قانون کے مطابق انتخابات اپریل میں ہی ہوجاناتھا، لیکن کورونا وباءاور لاک ڈاﺅن کی وجہ سے ان سیٹوں پر ابھی تک انتخابات نہیں کرایا جاسکا ہے۔ اب 19جون کو ان سیٹوں پر انتخابات ہونگے ، اسی دن نتائج سامنے آئیںگے۔ بی جے پی کی طرف سے جیوتی رادتیہ سندھیا اور ڈاکٹر سمیر سولنکی راجیہ سبھاکے امیدار ہیں۔ وہیں کانگریس کی طرف سے دگوجے سنگھ اور فول سنگھ برےا نے پرچہ نامزدگی داخل کیا ہے۔ ان انتخابات میں سابق وزیراعلیٰ دگوجے سنگھ ، جیوتی رادتیہ سندھیا ، پھول سنگھ بریا اور سمیر سولنکی کی قسمت کا فیصلہ ہونا ہے۔ اب دیکھنا یہ ہوگا کہ یہ ساتوں ایم ایل ایز کن کو ووٹ کرتے ہیں۔