ڈی جی پی کا فرمان: سبھی افسران آفس میں رہیں موجود


بھوپال 7جون(نیانظریہ بیورو)
لاک ڈاﺅن میں رعایت ملنے کے بعد بھی پولس ہیڈکوارٹر میں تعینات کئی سینئر افسران دفتر نہیں پہنچ رہے ہیں اور جو دفتر پہنچ بھی رہے ہیں وہ لنچ کے بعد واپس نہیں لوٹتے ہیں۔ اسی لئے ریاستی پولس کے اعلیٰ افسر وویک جوہری نے ایسے تقریباً 29افسران کو ریگولر وقت پر آفس آنے کی ہدایت دی ہے۔ کورونا وباءاور لاک ڈاﺅن کی وجہ سے کئی سرکاری دفاتر بند تھے اور یہاں افسران،ملازمین کے آنے پر بھی روک لگائی گئی تھی۔ لیکن اب ان لاک 1:0میں تمام سرکاری دفاتر کھل گئے ہیں اور افسران ،ملازمین کو دفتر آنے کی ہدایت بھی دی گئی ہے۔ دراصل پولس ہیڈکوارٹر میں تعینات کئی سینئر افسران رعایت ملنے کے بعد بھی دفتر آنے اور کام کرنے میں غفلت برت رہے ہیں۔ اسی لئے ڈی جی پی وویک جوہری نے ایسے تقریباً 29ڈی جی،اے ڈی جی اور آئی جی سطح کے افسران کو پھٹکار لگائی ہے۔ جو کام پر واپس نہیں لوٹ رہے ہیں۔ کچھ افسران پولس ہیڈکوارٹر تو پہنچ رہے ہیں لیکن لنچ کے بعد وہ بھی غیر حاضر ہوجاتے ہیں۔
غورطلب ہے کہ ڈی جی پی وویک جوہری نے خط لکھ کر افسران کو آفس میں آنے کی ہدایت دی ہے ، حالانکہ خط میں کسی بھی افسرکا نام نہیں لکھا گیا ہے۔ لیکن ذکر کیاگیا ہے کہ ایسے افسران خود سمجھ جائےں اور مستقبل میں ہیڈکوارٹر کے اوقات اور کام کو ترجیح دیتے ہوئے آفس میں اپنی موجودگی یقینی کریں۔ خط میں یہ بھی لکھا گیا ہے کہ اگر سنیئر افسران ہی آفس میں موجود نہیں رہیںگے تو اس کا اثرکہیں نہ کہیں ماتحت ملازمین پر بھی پڑے گا۔