راجیہ سبھا انتخابات کی تیاریاں تیز ، اس مرتبہ سینٹرل ہال میں ہوگی ووٹنگ


بھوپال:3جون(نیانظریہ بیورو)
راجیہ سبھا انتخابات کی تاریخوں کے اعلان کے ساتھ ہی مدھیہ پردیش اسمبلی سکریٹریٹ نے انتخابی تیاریوں کو حتمی شکل دینا شروع کردیا ہے۔ مدھیہ پردیش میں راجیہ سبھا کی 11 میں سے 3 سیٹوں کے لئے 19 جون کو ووٹنگ ہونی ہے ، کورونا کے اضافے کے پیش نظر اس مرتبہ سینٹرل ہال میں ووٹنگ کرانے کی تیاری کی جارہی ہے ، تاکہ سوشل ڈسٹینس پرمکمل طورپرعمل ہو۔ وہ کمرہ جہاں عام طور پر ووٹنگ ہوتی تھی وہ چھوٹا ہے۔ دوسری جانب ، اسمبلی سکریٹریٹ نے تمام اراکین اسمبلی کی صحت کی رپورٹ بھی طلب کی ہے ، جس میں تمام نارمل پائے گئے ہیں۔
غورطلب ہے کہ راجیہ سبھا انتخابات پہلے مارچ میں ہونا تھا ، لیکن لاک ڈاو¿ن کی وجہ سے اسے ملتوی کردیا گیا تھا۔ اب راجیہ سبھا کا انتخاب 19 جون کو ہونا ہے جس کی تیاری میں اسمبلی سیکرٹریٹ مصروف ہے ، اسمبلی میں آمدورفت کرنے والے تمام لوگوں کے ریکارڈ رکھے جارہے ہیں اور اسکریننگ کے بعد ہی اسمبلی میں داخلے کی اجازت دی جارہی ہے۔ اسمبلی سکریٹریٹ کے پرنسپل سکریٹری اے پی سنگھ نے میڈیا کو بتایا کہ راجیہ سبھا انتخابات کے لئے تیاری کی جارہی ہے ، ووٹنگ کے دوران سوشل ڈسٹینس برقرار رکھناہے ،اس لئے اس مرتبہ سینٹرل ہال میں ووٹنگ ہوگی۔ نیز ، محکمہ صحت تفتیش اور صفائی ستھرائی کے انتظامات کررہا ہے۔
بی جے پی اور کانگریس نے دو امیدوار کھڑے کیے ہیں:
بی جے پی اور کانگریس نے راجیہ سبھا انتخابات کے لئے دو ، دو امیدوار کھڑے کیے ہیں ، بی جے پی نے سینئر رہنما جیوتی رادتیہ سندھیا اور سومیر سنگھ سولنکی کو نامزد کیا ہے ، جبکہ کانگریس نے دوسری مرتبہ دگ وجے سنگھ اور پھول سنگھ باریا کو نامزد کیا ہے۔ وہیں بی جے پی کے پربھات جھا ، ستیہ نارائن جاٹیہ اور کانگریس کے دگ وجے سنگھ کی میعاد پوری ہونے کے بعد ، تینوں سیٹیں خالی ہیں ، جس پر انتخابات ہونے ہیں۔ موجودہ ممبران اسمبلی کی تعداد کے مطابق ، بی جے پی کے لئے دو اور کانگریس کے لئے ایک سیٹ حاصل کرناتقریباً آسان سمجھا جارہا ہے۔