لاک ڈاﺅن میں راحت کے بعدکورونا مریضوں کی تعداد میں ہو گااضافہ :ایڈیشنل چیف سیکریٹری


ہائی رسک والے علاقوں میںصد فیصد سروے کا کام کیاجائے مکمل
ضلع انتظامیہ کی کارکردگی کا لیا جائزہ
اُجین 02 جون(نیا نظریہ بیورو) منگل کے روز ایڈیشنل چیف سکریٹری، پبلک ہیلتھ اینڈ فیملی ویلفیئر ،میڈیکل ایجوکیشن جناب محمد سلیمان نے کورونا وائرس کے انفیکشن سے بچا¶ اور اقدامات کے بارے میں ضلع اُجین میں اب تک کی جانے والی تیاریوں کا جائزہ لیا۔ انہوں نے وضاحت کی کہ لاک ڈا¶ن کھلنے کے بعد انفیکشن کے معاملات میں اضافہ ہو گا ، لیکن اس سے
ڈرنے کی ضرورت نہیں ہے ، جیسے جیسے معاملات تیزی سے بڑھتے جائیں گے ریکوری میں تیزی آ ئے گی۔ ایڈیشنل چیف سکریٹری نے ڈویژنل کمشنر جناب آنند شرما اور کلکٹر جناب آشیش سنگھ کو ہدایت دی کہ مادھو نگر اسپتال میں تمام ضروری سہولیات کو متحرک کیا جائے اور اسپتال کو اچھی طرح سے آراستہ کیا جائے۔ اسپتال میں 100 آکسیجن بیڈ کا انتظام یقینی بنایا جائے۔ انہوں نے ہائی رسک والے علاقوں میں صد فیصد سروے کرکے انفیکشن کے صد فیصد مریضوں کی شناخت کرنے کی ہدایت دی اور کہا کہ سروے ٹیم کو ایک بار میں کورونا کی علامات کی نشاندہی کرنے کے لئے تربیت دی جانی چاہئے۔ کورونا کی علامات کی شناخت اور اسکریننگ میں غیرضروری تاخیر نہیں ہونی چاہئے۔ جیسے ہی کورونا کے مریض سامنے آجاتے ہیں ، انہیں فوری طور پر اسپتال میں داخل کرایا جائے اور ان کا علاج شروع کیاجانا چاہئے۔ ایڈیشنل چیف سکریٹری نے بخار کلینک کی تعداد بڑھانے کے لئے ہدایات دیں اور کہا کہ اگر کسی شخص میںکورونا کی علامات پائی جاتی ہیں تو وہ بخار کلینک جا کر اپنی جانچ کر ائے۔ کوئی بھی مشتبہ شخص گھر پر نہیں رہنا چاہئے ، بصورت دیگر انفیکشن کے امکانات بڑھ جاتے ہیں۔ انہوں نے ضلع اُجین میں کورونا مریضوں کی اموات کی شرح میں کمی پر اطمینان کااظہار کیا۔ بتایا گیا کہ مختلف وارڈوں میں محلہ کلینک کھولے گئے ہیں۔ ان کلینکوں میں ضروری دوائیں اور نرسنگ عملہ فراہم کیا جاتا ہے۔ محلہ کلینک کے ذریعے 60 کورونا کیسوں کی نشاندہی کی گئی ہے۔ایڈیشنل چیف سکریٹری نے چیف میڈیکل اینڈ ہیلتھ آفیسر ڈاکٹر مہاویر کھنڈیلوال کو ہدایت دی کہ بھرتی مریضوں کی حالت دیکھ کر ہی انہیں چھٹی د ئے جانے پر فیصلہ کریں ۔ انہوں نے کورونا مریضوں کو متناسب کھانا دینے کی ہدایت دی اور کہا کہ مریضوں کو بھی اسپتال میں گھر جیسا ماحول ملنا چاہئے۔ اسپتالوں میں صفائی اور دیگر انتظامات کو برقرار رکھا جائے۔ انہوں نے کلکٹر کو ہدایت دی کہ ہر جگہ ہوم ڈلیوری ممکن نہیں ہے ، لہٰذا کچھ علاقوں میں سبزیوں اور پھلوں کی دکانیں کھولی جائیں۔ بتایا گیا کہ املتاس اسپتال میں 300 بستروں کا انتظام کیا گیا ہے۔ اگر ضرورت ہو تو ، اس کی تعداد میں اضافہ کیا جائے گا۔ ایڈیشنل چیف سکریٹری نے ہدایت دی کہ اگر آیشمان بھارت اسکیم کے تحت مستفید ہو نے والے کورونا کے مشتبہ مریض ہوں تو انہیں اس اسکیم کا فائدہ دلایا جائے ۔ ہر فرد کو معاشرتی دوری پر عمل کرنا چاہئے ماسک پہننا چاہئے اور صابن سے اپنے ہاتھ ضر وردھوئیں ۔ انہوں نے بتایا کہ اس وقت 70 فیصد معاملات میں ریکوری ہو رہی ہے ۔ اموات کی شرح میں بھی کمی ہوچکی ہے اور اب لوگ علاج کے لئے آرہے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ مدھیہ پردیش میں ریکوری کی شرح راجستھان کے بعد دوسرے نمبر پر ہے۔ کلکٹر جناب آشیش سنگھ نے بتایا کہ ضلع میں 692 مثبت کیسز ہیں ، جن میں سے 159 معاملات سرگرم ہیں۔ سروے سے 117 مثبت مریضوں کی شناخت ہوئی۔ بخار کلینک کے ذریعے 104 مریض سامنے آئے۔ سروے کی ٹیم گھر گھر سروے کاکام کر رہی ہے۔ 116 کنٹینمنٹ ایریا بنائے گئے ہیں۔ گزشتہ 10 دنوں میں ، مالی پورہ اور بیگم پورہ سے معاملات سامنے آئے ہیں۔ 15 ہاٹ اسپاٹ ہیں جہاں مزید کورونا کیسز سامنے آئے ہیں۔ چرک اسپتال کا چھٹا فلور ریزرو رکھا گیا ہے۔ ضرورت پڑنے پر کورونا کے مریضوں کو یہاں بھرتی کیا جائے گا۔ ایس پی جناب منوج کمار سنگھ نے بتایا کہ 675 مقامات پر سی سی ٹی وی کیمرے نصب کر نگرانی کی جا رہی ہے۔ آٹھ ڈرون کیمرے لگائے گئے ہیں۔ 10 ہوم قرنطین چیکنگ پارٹیاں تشکیل دی گئی ہیں۔ 17 موٹر سائیکل پارٹیاں اپنا فریضہ نبھا رہی ہیں ۔ سرکاری کام میں خلل ڈالنے پر 7 افراد کے خلاف کارروائی کی گئی ہے اور لاک ڈا¶ن کی خلاف ورزی پر 3188 افراد کے خلاف بھی کارروائی کی گئی ہے۔ 14 پولیس اہلکار بھی انفیکٹیڈ ہوئے ہیں ، جن کا علاج جاری ہے۔ اس میٹنگ میں پرنسپل سکریٹری میڈیکل ایجوکیشن جناب سنجے شکلا ، ڈویژنل کمشنر جناب آنند کمار شرما ، انسپکٹر جنرل پولیس جناب راکیش گپتا ، ڈی آئی جی جناب منیش کپوریا ، کلکٹر جناب آشیش سنگھ ، ایس پی جناب منوج کمار سنگھ ، کمشنر میونسپل کارپوریشن جناب شتج سنگھل موجود رہے ۔