کووڈ-19 کی ڈیوٹی میں لگے ڈاکٹر جوڑے کو سرکاری مکان سے بے دخل کرنے پہنچاعملہ


بھوپال:2جون(نیانظریہ بیورو)
جہاں ایک طرف ، کورونا وائرس کے انفیکشن کی ڈیوٹی میں مصروف کورونا جنگجوو¿ں کا اعزاز کیا جارہا ہے اوران کی سہولیات کا بھی خیال رکھا جارہا ہے ، دوسری طرف بھوپال میں ایک مختلف پہلو بھی دیکھائی دے رہاہے۔ راجدھانی بھوپال کے ضلع اسپتال میں کووڈ۔19 کی ڈیوٹی پر تعینات ڈاکٹر وی کے دوبے کے سرکاری گھرپر آج سرکاری عملہ مکان خالی کروانے کے لئے پہنچی۔
محکمہ اسٹیٹ کے الاٹمنٹ کو ختم کرنے والے افسر مکل گپتا کا کہنا ہے کہ یہ ایک انتظامی عمل ہے۔ ڈاکٹر جوڑے پر غیر قانونی طور پر گھر میں کلینک چلانے کا الزام ہے۔ بہت سے ڈاکٹر اس بارے میں پہلے ہی شکایت کر چکے ہیں۔ ڈاکٹر یہاں مقیم نہیںہے ، وہ یہاں صرف کلینک چلارہے ہیں۔ جس کی وجہ سے ہمیں یہ سرکاری مکان خالی کرانا پڑا۔ اسی دوران ڈاکٹر وی کے دوبے کی اہلیہ ، ڈاکٹر نرملا دوبے کا کہنا ہے کہ یہ سب ان کے ساتھ جان بوجھ کر کیا جارہا ہے۔ یہ دونوں کووڈ 19 کی ڈیوٹی پر مصروف ہیں۔ انہیں 31 مئی کو گھر خالی کرنے کا نوٹس دیا گیا تھا اور آج 2 دن بعد ٹیم گھر خالی کرنے پہنچی۔ جبکہ اصول کے مطابق ، کم از کم 7 دن کا وقت دینا ضروری ہے۔لیکن موجودہ وقت میں ڈاکٹر شوہر اور بیوی کووڈ 19 کی ڈیوٹی میں سرگرم عمل ہیں ، جس کی وجہ سے انہیں ان تمام کاموں کو کرنے کا وقت نہیں مل رہا ہے۔ ڈاکٹر کی اہلیہ کا کہنا ہے کہ وہ دانتوں کا ڈاکٹر ہے اور یہاں صرف ڈینٹل چیئر رکھی گئی ہے۔ دونوں بچے بھی ڈاکٹر ہیں ، لیکن وہ دوسرے گھر میں رہ کر پریکٹس کررہے ہیں۔ اسی دوران ، جنوبی مغربی خطے کے ایم ایل اے اور سابق وزیر پی سی شرما بھی موقع پرپہنچ گئے۔ غورطلب ہےکہ ڈاکٹر وی کے دوبے جے پی اسپتال میں چیف نوڈل آفیسر کووڈ 19 کے فرائض میں مصروف ہیں۔ کورونا وائرس کے انفیکشن کے دوران ، ڈیوٹی پر موجود ڈاکٹروں کو اپنے گھروالوں کے لئے بھی وقت نہیں مل پاتا ہے ، سوال یہ پیدا ہورہا ہے کہ اس ڈاکٹر جوڑے کا گھر خالی کرانا کتنا مناسب ہے جو کوروناسانحہ میں خدمات انجام دے رہے ہیں۔