کوروناکاخوف : رین بسیرابندکرنے کے بعد فٹ پاتھ پر ڈیرہ ڈالنے پرمجبورہوئے لوگ


بھوپال:02اپریل(نیانظریہ بیورو) کورونا وائرس کی وجہ سے پوراملک لاک ڈاو¿ن میں ہے،جس کی وجہ سے پورے ملک کو مشکلات کا سامنا ہے۔ اسی دوران بھوپال کے ہزاروں مزدور جو خانہ بدوش اور بھیک مانگتے ہیں ، اپنی زندگی کو داو¿ پر لگا کر سڑکوں پر سونے کومجبورہیں۔ جن کی نہ تو اسکریننگ کی جارہی ہے اور نہ ہی انہیں کوئی ماسک یا سینیٹائزر مہیا کیا گیا ہے۔حکومت نے ان جیسے لوگوں کے لئے راجدھانی کے متعدد حصوں میں پناہ گاہیں(رین بسیرا) تعمیر کیں ہیں، تاکہ وہ سردیوں ، بارش اور دیگر آفات میں محفوظ رہیں ، لیکن بھوپال کے سلطانیہ اسپتال کے سامنے کورونا وائرس کی وجہ سے انتظامیہ کے لئے معاشرتی پریشانی کا باعث بنی۔ اسی طرح بھوپال میونسپل کارپوریشن کے افسران نے ان غریب لوگوں کو رات کے وقت وہاں سے انہیں ہٹانے کا مشورہ دیا۔اس صورتحال میں ، کچھ سماجی کارکن فٹ پاتھ پر سونے کے لئے مجبورہیں۔ سماجی تنظیمیں غریب اور لاچار لوگوں کے لئے کھانا اور کپڑے مہیا کررہی ہیں۔اورجہاں تک ہوسکتاہے وہ ان کی مدد بھی کررہے ہیں۔بہرحال انتظامیہ کوچاہئے کہ اس مشکل وقت میں کورونا وائرس کی زدمیں یہ لوگ نہ آئیں،اس کے لئے انہیں کوئی مناسب ٹھکانہ مہیاکرایاجائے۔