بھوپال کے بجرنگی بھائی جان کی کوششوں سے4 ہندوستانیوں کی وطن واپسی ہوئی ممکن


بھوپال:31مئی(پریس ریلیز)
راجدھانی بھوپال میں بجرنگی بھائی جان کے نام سے مشہور امبیڈکر نگر ضلع کے رودر پور بھگاہیں کے باشندے سید عابد حسین کی کوششوں سے اپنے وطن ہندوستان پہونچے بھوپال کے چار افراد جو لاک ڈاو¿ن کی وجہ سے سنگاپور میں پھنسے تھے۔جس میں تین خواتین اور ایک مرد شامل ہیں۔ بھوپال مدھیہ پردیش سے تعلق رکھنے والے ظہور حسین ، زہرا تشرف ، نفیسہ سیف الدین اور منیرا بانو ، جو دو ماہ سے سنگاپور میں پھنسے تھے۔ یہ لوگ اپنی بہن کی بیٹی کی شادی کے لئے وہاں گئے تھے ، ان کے ایک قریبی رشتے دار مرتضیٰ علی نے عابد حسین عرف بجرنگی بھائی جان کوفون پر اسکی جانکاری دی۔ مرتضیٰ علی نے عابد حسین کو بتایا کہ اس کے کچھ رشتہ دار اچانک لاک ڈاو¿ن کی وجہ سے سنگاپور میں پھنسے ہیں جو ایک شادی پر گئے تھے۔ اچانک لاک ڈاو¿ن ہونے کہ وجہ سے وہ لوگ وہیںپھنس گئے ہیں۔ سید عابد حسین نے فوری طورپرہندوستانی وزیر خارجہ ڈاکٹر ایس جےشنکر ، سکریٹری وزارت خارجہ ، حکومت ہند اور سنگاپور کے سفیر جاوید اشرف سے رابطہ کیا۔اور چاروں افراد کی مدد کے لئے ٹویٹر پر مدد کی درخواست کی۔ ایمبیسی نے سید عابد حسین کے مشن کو سنجیدگی سے لیا اور کہا کہ سفارت خانہ ان لوگوں کی مکمل مدد کرے گا۔ اورسنگا پور میں ہندوستان کے سفیر جاوید اشرف نے فوری طور پر ایک افسر کو ان چاروں ہندوستانیوں کی مکمل مدد کرنے کا حکم دیا۔ اور تمام طریقہ کار مکمل کرنے کے بعد 26 مئی کو تمام لوگوں کو بحفاظت ہندوستان روانہ کردیا۔ دہلی ایئر پورٹ پر ان ہندوستانیوں کی پرواز کامیابی کے ساتھ آنے کے بعد اب یہ لوگ سرکاری انتظام کے ذریعے چاروں کورنٹائن کو مکمل کرنے کے بعد بھوپال میں اپنے گھر واپس آجائیں گے۔ ہندوستان پہنچنے کے بعد ، ان چار ہندوستانی تارکین وطن نے جاوید اشرف اور سید عابد حسین عرف بجرنگی بھائی جان کے ساتھ حکومت ہند کا شکریہ ادا کیا۔ساتھ ہی سید عابد حسین نے اپنے مشن کی کامیابی پر وزیر خارجہ ڈاکٹر ایس جے شنکر داس اور سنگا پور میں ہندوستان کے سفیر جاوید اشرف سمیت ان کی پوری ٹیم کا شکریہ ادا کیا۔ اور کہا کہ میں انسانیت کے لئے اس طرح کی مہم کو آگے بھی جاری رکھوں گا۔