تیسری لہر آگئی ہے،مل کر لڑنا ہوگا:شیوراج سنگھ چوہان

بھوپال یکم جنوری(نیا نظریہ بیورو)مدھیہ پردیش میں کورونا کے معاملات میں اچانک اضافہ ہوا ہے۔ 24 گھنٹوں میں ڈیڑھ گنا نئے کیس آنے سے ہلچل مچ گئی ہے۔ وزیر اعلیٰ شیوراج سنگھ چوہان نے بھی ہفتے کے روز اعتراف کیا ہے کہ ریاست میں کورونا کی تیسری لہر آچکی ہے۔ وزیراعلیٰ نے نئے سال پر ویڈیو پیغام جاری کرتے ہوئے کہا کہ تیسری لہر کا مقابلہ عوامی تعاون سے کرنا ہوگا۔ ضروری انتظامات کر لیے گئے ہیں لیکن سب کو محتاط اور چوکنا رہنا ہو گا۔ گزشتہ 24 گھنٹوں میں ریاست میں 124 نئے کیس سامنے آئے ہیں۔ اس کے علاوہ 10 کیس اومیکرون کے ہیں۔
وزیراعلیٰ نے کہا کہ انفیکشن سے بچنے کے لیے ہمیں دوستانہ رویہ اختیار کرنا ہوگا۔ نئے سال میں ایک خوشحال اور ترقی یافتہ مدھیہ پردیش کی تعمیر کے عزم کو آگے بڑھانا ہوگا۔ وزیر اعلیٰ نے عوام کو نئے سال کی مبارکباد دی۔ انہوں نے کہا کہ نئے سال میں خود کفیل مدھیہ پردیش کو نئے عزم، نئی اُمنگ اور نئے جوش کے ساتھ تعمیر کرنا ہے۔
بتادیں کہ کورونا کے بڑھتے معاملات کے باوجود لوگ نہ تو ماسک پہن رہے ہیں اور نہ ہی حکومت سختی کررہی ہے۔ حد تو یہ ہے کہ ہجوم والے علاقوں میں بھی سماجی دوری پر عمل نہیں کیا جا رہا ہے۔ ریاست میں معاملات میں اضافے کے ساتھ ہی اب ریاست میں پابندیاں بڑھانے کی بحث بھی تیز ہوگئی ہے۔
وزیراعلیٰ نے کہا کہ تعلیم اور صحت کے شعبے میں بہتر کام کرنے کی ضرورت ہے۔ سی ایم رائز اسکول کی تعمیر اس سال شروع ہو جائے گی۔ معیشت کو مضبوط بناکر روزگار کے مواقع پیدا کرنا ہے۔یہ سب عوام کے تعاون سے کرناہوگا ۔