ضمنی انتخابات: منورکوثرجلدہی ریاستی کانگریس صدرسے کریں گے ملاقات


بھوپال:28مئی (نیانظریہ بیورو)
ریاست کی کمل ناتھ حکومت جو اقلیت میں آگئی تھی بی جے پی کی پالیسیوں کا شکار ہوگئی۔لیکن اب کانگریس کو دوبارہ وجود میں آنے کے لئے ضمنی انتخابات میں ایک خصوصی حکمت عملی کی ضرورت ہوگی۔ بڑی تعداد میں فتوحات حاصل کرنے میں مشکلات کاسامناکرناہوگا،اس کے علاوہ کچھ ایسی کوششیں بھی ہونی چاہئیں کہ بی جے پی اکثریت کے اعداد و شمار کو چھونہ پائے۔ اس کے لئے ، ضمنی انتخابات کے دوران دس خصوصیسیٹوں پر ایک خصوصی حکمت عملی تیار کی گئی ہے۔ جس پرریاستی کانگریس صدر کمل ناتھ سے بات چیت کے بعد جلد ہی کام شروع کردیا جائے گا۔
کانگریس رہنما منور کوثر اس خصوصی حکمت عملی پر ضمنی انتخابات میں تربیت یافتہ ٹیم میدان میں اتاریں گے۔ وہ جلد ہی اس خاص حکمت عملی پر بات کرنے کے لئے کمل ناتھ سے ملاقات بھی کریں گے۔ ناتھ کی رضامندی کے بعد ، ان تمام علاقوں میں کام شروع کردیا جائے گا۔ کوثر نے کہا کہ بی جے پی نے ریاست میں حکومت بگاڑنے جیسی صورتحال کو ڈپلومیسی اور بے ایمان رہنماو¿ں پر منحصر کردیا ہے ، لیکن موجودہ صورتحال میں ضمنی انتخابات میں کامیابی حاصل کرنا ممکن نہیں ہے۔ ایسی کمزور صورتحال میں اگر کانگریس ٹھوس حکمت عملی کے ساتھ سامنے آتی ہے ، تو وہ یقینی طور پر پارٹی بڑی تعدادمیں سٹیوں پراپنی جیت درج کراسکتی ہے اور ریاست میں کانگریس کی کمل ناتھ حکومت دوبارہ بحال ہوسکتی ہے۔ کوثر نے کہا کہ کانگریس کی سب سے بڑی جیت بی جے پی کی فتح کو مشکل بنانا اور اسے اکثریت کے نشان کو چھونے سے روکنا ہے۔ اس کے بعد کانگریس کو یقینی طور پر بی ایس پی ، ایس پی ، آزاد امیدواروں کی حمایت حاصل ہوگی۔ کوثر نے مزیدکہا کہ انہوں نے ایک خصوصی ٹیم کو ٹرینڈ کیا ہے ، جو ضمنی انتخابات میں بی جے پی کو فتح سے دور رکھنے کے لئے کام کرے گی۔ ناتھ کی منظوری کے فوراً بعد ہی یہ ٹیمیں ضمنی انتخابات میں کام کرنا شروع کردیں گی۔