شیوراج سنگھ عوامی نمائندوں کو ہراساں کرکے خوش ہوتے ہیں: گووند سنگھ


بھوپال :21مئی(نیانظریہ بیورو)
لاک ڈاو¿ن میں جس طرح سے ریاستی حکومت رہنماو¿ں کو نوٹس جاری کررہی ہے جو کمل ناتھ حکومت میں وزیر تھے،نوٹس میں بنگلہ خالی کرنے اور بنگلے کو سیل کرنے کی بات کہی گئی ہے۔ اس معاملے کولیکر سابق وزیر ڈاکٹر گووند سنگھ نے وزیر اعلیٰ شیوراج سنگھ چوہان کو نشانہ بنایا ہے۔ گووند سنگھ کا کہنا ہے کہ یہ بی جے پی کی ذہنیت اور اس کی سوچ کا عکس ہے۔ جس طرح سے وہ منتخب عوامی نمائندوں کی توہین کررہے ہیں ۔ یہ غیر جمہوری اور آمرانہ رویہ ہے۔ اگر شیو راج سنگھ کوعوامی نمائندوں کو اذیت دے کر خوشی ملتی ہے تو میں ان کا شکریہ ادا کرتا ہوں۔ اگر انہیں ہمارے سامان پھینکنے میں سکون ملتا ہے ، تو ہم اسے قبول کرنے میں خوش ہیں۔
کانگریس لیڈر گووند سنگھ نے وزیراعلیٰ کو نشانہ بنایا:
سابق وزیر اور ایم ایل اے ڈاکٹر گووند سنگھ کا کہنا ہے کہ یہ شیو راج سنگھ کی سوچ اور عمل ہے۔ آج تک ، کانگریس پارٹی نے سابق ایم ایل اے اور سابق وزراءسے مکانات خالی نہیں کرائےہیں ، لیکن جو کچھ ہو رہا ہے وہ بی جے پی کی روایت اورذہنیت کی عکاس ہے۔ جس سے ایسا لگتا ہے کہ وہ جمہوریت پر یقین نہیں رکھتے ہیں۔ منتخب عوامی نمائندوں کی توہین کرنے سمیت دیئے گئے نوٹس کی زبان بھی توہین آمیز ہے۔ ہم جیسے لوگ بنگلوں میں نہیں رہ رہے ہیں۔ جس دن حکومت نے استعفیٰ دیا ، اسی دن میں نے تمام سہولیات واپس کردی۔ محکمہ کے تمام افسران سے کہا کہ ہمارا عملہ اور سامان ہٹا دیں۔سینٹرل اسٹور والوں نے بتایا کہ لاک ڈاو¿ن ہوچکا ہے ، جب یہ کھلے گا تو سامان اس وقت ہٹا یا جائے گا۔ کوئی سامان لینے کو تیار نہیں ، حکومت نے بھی کوئی اطلاع نہیں دی۔ اچانک نوٹس پر سامان پھینکنا اور ترون بھنوٹ کے بنگلے کو سیل کرنا غیر جمہوری اور آمرانہ حکم ہے۔
اسی کے ساتھ گووند سنگھ کا کہنا ہے کہ حلف اٹھانے کے بعد شیو راج سنگھ نے کہا تھا کہ میں انتقام اور بددیانتی سے کوئی کام نہیں کرتا ہوں۔ اب اس کے الفاظ اور اس کے اعمال میں فرق کے بارے میں سوچئے۔ وہ کہتے ہےں کہ آپ نے وقت دیا ، لاک ڈاو¿ن میں اجازت نہیں تھی۔ لہذا میں گھر گیا ، جب مجھے اطلاع ملی۔ میں کرایہ کے لئے مکان تلاش کر رہا ہوں۔ اگر مجھے کچھ دنوں میں مکان مل گیا تو میں سامان لے جاو¿ں گا۔ شیوراج سنگھ کی سرکاری ملکیت جو سرکاری بنگلہ ہے محفوظ رکھیں۔ ہم لوگوں کے ٹھہرنے سے یہ تباہ ہوسکتے ہیں۔ میں ان سے کہتا ہوں کہ عمل کو تیز کریں ، ان لوگوں کا سامان سڑک پر پھینک دیں جو اپنے مکانات کو خالی نہیں کررہے ہیں۔ اگر انھیں یہ کرنے سے سکون ملتاہے تو میں ان کی خوشی میں ہی خوش رہوں گا۔