لاک ڈاﺅن اور کرفیو کے دوران ما دھو کالج میں آن لا ئن کلاس کا ہوا آغاز


طلبا ءو طالبات ہو رہے مستفید
اُجین یکم اپریل (نیا نظریہ بیورو) مادھو کالج ہمیشہ سے ہی موضوع بحث رہا ہے۔ لاک ڈا¶ن کے دوران مادھو کالج سے ایک مثبت خبر آ ئی۔ یہاں شعبہ¿ انگریزی کی پروفیسر ، ڈاکٹر راج شری سیٹھ ، پوسٹ گریجویشن کلاسوں کے طلباءکی باقاعدہ کلاسیں لے رہی ہیں ۔ طلباءکو آن لائن سے جڑنے کے لئے انہوں نے بنگلور کی لاءیونیورسٹی سے رجوع کر اپنے ذاتی اخراجات سے رقم ادا کر کے آن لائن کلاسوں کا بندوبست کیا۔ اس انتظام میں ، کلاس کے سارے طلباءمقررہ وقت میں میڈم کے لیکچر سنتے ہیں ،وہ سوالات پوچھتے ہیں اور گھر بیٹھے مسائل حل کرتے ہیں ۔ ایم اے چوتھے سمسٹر کی طالبہ رمشا انصاری کا کہنا ہے کہ یہ ہمارا آخری سمسٹر ہے۔ میڈم راج شری سیٹھ نے گھر بیٹھے ہمارے لئے کلاس کا بندوبست کرکے ہمارے بہت بڑے مسئلے کو حل کیا ہے ۔ ہمارا سب سے مشکل ترین پیپر لسانیات کی صوتیاتیات ہے۔ ہمیں اسے سمجھنے کے لئے ایک استاد کی ضرورت ہے۔ ہم میڈم کے مشکور ہیں جنہوں نے اس مسئلے کو حل کیا۔ ہم نہیں جانتے کہ امتحان کب ہوگا ، اس کے لئے ہم گھر پر مکمل تیاری کر رہے ہیں۔ کالج کے پرنسپل ڈاکٹر منصور خان ، اساتذہ ایسوسی ایشن کے صدر ڈاکٹر روی مشرا ، شعبہ¿ اردو کے استاذ ڈاکٹر ظفر محمود، ڈاکٹر سیٹھ کو مبارکباد پیش کرتے ہوئے اپنی نیک خواہشات سے نوازا ہے ۔