رمضان کی پہلی طاق رات میں ہوئی گھروں میں عبادت


بھوپال©:15مئی(نیانظریہ بیورو)
ماہ رمضان کا تیسرا جمعہ بھی سادگی میں ظہر کی نماز کی ادائیگی کے ساتھ گذر گیا۔ اس سے قبل بروز جمعرات اس مہینے کی خاص عبادتوں والی طاق راتوں کی شروعات بھی ہوگئی ہے۔ عقیدت مندوں نے پوری رات عبادت کی اور جمعہ کی نماز کے بعدہاتھ پھیلا کر اللہ سے اس مشکل حالات کو ٹالنے کی دعائیں کی ۔واضح رہے کہ رمضان المبارک کے آخری عشرہ کی شروعات کے بعد شب قدر کی چاہ میں اس رات کی جانے والی عبادتیں شروع ہوگئی ہیں۔ اس عشرہ میں مسلسل پانچ مختلف راتوں میں خاص عبادت کراللہ کے بندے اپنے رب کو راضی کرنے کی کوشش کررہے ہیں۔ گناہوں کی معافی، بہتر مستقبل،حلال روزی کے انتظامات، موت کے بعد جہنم کی آگ سے خلاصی کے علاوہ موجودہ وقت میں کورونا سے نجات کی دعائیں بھی شامل ہوگئی ہےں۔ جمعہ رات کی عبادت کے بعد لوگوں نے جمعہ کی نمازمیں بھی اس بلا سے نجات چاہی اوررب کے حضور خصوصی دعائیں کی ہے۔
جمعہ پر ہوتا ہے خاص نظارہ:رمضان کے تین جمعہ لاک ڈاﺅن میں گذر چکے ہیں۔ آخری جمعہ پر بھوپال میں الوداع کی خاص اہمیت حاصل ہے۔ اس دن عقیدت مند عید کی طرح نئے کپڑے اور خوشی کے ساتھ اس دن کو رب کے حضورحاضرہوتے ہیں۔ لیکن لاک ڈاﺅن کی پابندیوں کی وجہ سے اس مرتبہ حالات مختلف ہیں جس کی وجہ سے لوگوں کو یہ دن بھی گھروں میں ہی منانے کے حالات بن گئے ہیں۔
باکس
مدد کے لئے بڑھے ہاتھ:ماہ رمضان میں دی جانے والی زکوة، فطرہ اور صدقے کی رقم سے لوگ ایسے لوگوں کی مدد کررہے ہیں، جن کے لئے لاک ڈاﺅن میں گذارا کرنا دشوار ہوگیا ہے۔ زکوة اور فطرہ دیئے جانے کی ضرورت کو لوگوں نے عام رمضان سے زیادہ ادا کیا ہے۔ جس طرح کا موقع مل رہا ہے ، وہ ضرورت مندوں کی مدد کرتا نظر آرہا ہے۔علماءکرام نے پہلے روز سے ہی یہ اعلان کردیاتھاکہ لوگ اپنی حیثیت کے مطابق اپنے پڑوسیوں کاخاص خیال رکھیں۔علماءکرام کی اپیل کااثرصاف نظرآرہاہے۔